تازہ ترین
ڈاکٹروں کو اغوا کرکے غریبوں کا علاج کروانے والا برازیلین گینگ

ڈاکٹروں کو اغوا کرکے غریبوں کا علاج کروانے والا برازیلین گینگ

ویب ڈیسک (15 فروری 2018) برازیل میں ایک خطرناک گینگ چلانے والے تھامز ویرا گومز نے حال ہی میں ایک ایسا کام کرنا شروع کیا ہے جسے معاشرے کی بہتری کا ایک عمل قرار دیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے اپنے گینگ کے ذریعے 2 مرد نرسوں کو اغوا کیا اور بطور تاوان ان سے اپنی جان پہچان کے غریب لوگوں کو زرد بخار (یلو فیور) سے لڑنے کی ویکسین لگوائی ہے۔

ان دنوں برازیل کے بعض علاقوں میں جان لیوا زرد بخار کی وبا عام ہے اور اب تک درجنوں افراد اس سے ہلاک ہوچکے ہیں۔ حکومت نے زرد بخار سے بچانے والے کئی ویکسین سینٹر کھولے ہیں لیکن وہاں ڈاکٹر کم اور مریضوں کا بے انتہا رش ہے۔

اس تناظر میں غریب افراد شدید محرومی کا شکار ہیں۔ خصوصاً ری ڈی جنیرو کے علاقے سیلگیرو میں رہنے والے غریب لوگوں کی حالت بہت خراب ہے۔ اس مسئلے کے حل کے لیے اس جرائم پیشہ گروہ نے اغوا کرنے والا اپنا روایتی حربہ استعمال کیا جو بہت کامیاب رہا۔

تھامز نے اپنے کارندوں کے ذریعے 2 ہیلتھ ورکرز کو اغوا کرالیا اور انہیں غریبوں کی بستی میں لے جاکر تمام افراد کو زرد بخار سے بچانے والی ویکسین لگوائی۔ کام ختم ہونے کے بعد دونوں کو ان کے کلینک چھوڑ دیا گیا۔ اغوا کی اس دلچسپ واردات کی خبر ریو ڈی جنیرو کی پولیس کو بھی نہ ہوسکی۔

تاہم بلدیہ کے زیرِ اہتمام صحت کے ادارے نے اس معاملے کی تحقیق شروع کردی ہے۔ طبی اہلکاروں کو اغوا کرنے کا یہ واقعہ برازیل میں سوشل میڈیا پر مقبول ہو رہا ہے جو رواں ہفتے پیش آیا۔ دوسری جانب عوام تھامز گومز کی تعریف کرتے ہوئے اسے برازیل کا رابن ہڈ قرار دے رہے ہیں۔

یہاں تک کے برازیل کے سابق وزیرِ ماحولیات نے ٹویٹر میں اس قدم کو عوامی خدمت قرار دیا ہے۔ تاہم تھامز ویرا گومز اب بھی پولیس کو مطلوب ہے اور اس کی اطلاع دینے والے کے لیے 3 لاکھ پاکستانی روپے کی رقم رکھی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

فیصل آباد: ڈاکٹروں کی غفلت سے خاتون جاں بحق

لاہور:اسپتالوں کی نجکاری کے خلاف ڈاکٹروں، عملے کا احتجاجی مظاہرہ

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top