تازہ ترین
پشاور میں محرم الحرام کیلئے سیکیورٹی پلان جاری

پشاور میں محرم الحرام کیلئے سیکیورٹی پلان جاری

پشاور: (12 ستمبر 2018) شہر اور اس کے ملحقہ علاقوں میں محرم الحرام کے دوران امن و امان کی صورتحال کو قابو میں رکھنے کیلئے سیکیورٹی پلان جاری کر دیا گیا ہے۔ نو اور دس محرم کو موبائل سروس بند اور دس روز تک افغان مہاجرین کو کیمپوں تک محدود رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ محرم الحرام کے دوران تقریباً 10 ہزار پولیس اہلکار تعینات رہیں گے۔

پشاور میں عاشورہ محرم الحرام کیلئے سیکیورٹی پلان جاری کردیا گیا ہے۔ محرم الحرام کے دوران تقریباً 10 ہزار پولیس اہلکار تعینات رہیں گے۔

ایس ایس پی پشاور کے مطابق پولیس نے صوبائی حکومت کو سیکیورٹی خدشات سے آگاہ کرتے ہوئے نو اور دس محرم کو موبائل سروس بند کرنے کی سفارش ارسال کی ہے۔ جبکہ قبائلی علاقوں سے ملحقہ داخلی اور خارجی راستوں پر 60 سے زائد چیک پوسٹس قائم کی جائیں گی۔ایس ایس پی کے مطابق محرم الحرام کے دوران افغان مہاجرین کو کیمپوں تک محدود رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ملک بھر کے 340 علماء کرام کے پشاور میں داخلے پر پابندی کی سفارش بھی کی گئی ہے۔ شہر کے 13 علماء کی تقاریر پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ بھی محرم میں امن قائم رکھنے کیلئے کیا گیا ہے۔

ایس ایس پی اپریشنز پشاور جاوید اقبال کے مطابق پشاور میں محرم الحرام کے دوران 10 ہزار سے زائد پولیس اہلکار تعینات رہیں گے جبکہ امام بارگاہوں اور جلوسوں کی گزرگاہوں پر سی سی ٹی وی کیمرے نصب کردئیے گئے ہیں۔محرم الحرام کیلئے دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

محرم الحرام ہمیں ایثار وقربانی کا درس دیتا ہے، صدر مملکت،وزیراعظم

سندھ بھر میں 8 سے 10 محرم تک ڈبل سواری پر پابندی عائد

 

Comments are closed.

Scroll To Top