تازہ ترین
پراسیس شدہ کھانے کینسر کے خطرات بڑھا دیتے ہیں

پراسیس شدہ کھانے کینسر کے خطرات بڑھا دیتے ہیں

ویب ڈیسک (01 مارچ 2018) کیا جلد بازی میں وقت بچانے کے لیے آپ پراسیس شدہ کھانوں کو مائیکروویو میں گرم کرنے کا سوچتے ہیں؟ اب ایسا کرنے سے پہلے یہ بھی سوچیے کہ آیا یہ آپ کی صحت کے لیے درست بھی ہے یا نہیں؟

برطانوی میڈیکل جرنل میں فرانسیسی سائنسدانوں کی شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق پراسیس شدہ خوارک کینسر لاحق ہونے کے خطرے کو بڑی حد تک بڑھا دیتی ہے۔ ایسا کرنا خواتین میں چھاتی کے سرطان کا سبب بھی بن سکتا ہے۔Image result for processing foods

فرانسیسی محققین کے مطابق کسی بھی شخص کی روز مرہ کی خوارک میں اگر انتہائی پراسیس شدہ کھانے شامل ہیں، تو اس کو کینسر لاحق ہونے کے خطرات میں 12 فیصد اضافہ ہو جاتا ہے۔Image result for processing foods

اسی طرح خواتین میں چھاتی کے سرطان میں مبتلا ہونے کے خطرات میں 11 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔ اس تحقیق میں پراسٹیٹ اور آنتوں کے کینسر کا بھی مطالعہ کیا گیا تاہم پراسیس شدہ کھانوں کا ان 2 کینسر کی اقسام سے کوئی تعلق نظر نہیں آیا۔

پیرس کی 13 جامعات کے محققین پر مشتمل ٹیم نے یہ تحقیق2009 سے جاری اس پروگرام کے تحت کی جس میں 18 اور اس سے زیادہ برس کی عمر کے 1 لاکھ سے زائد افراد نے حصہ لیا۔

اس پروگرام کے تحت ان تمام افراد نے 24 گھنٹوں کے دوران استعمال کی گئی 3300 مختلف غذائی مصنوعات کو درج کروایا جس کی بنا پر تحقیق کو آگے بڑھایا گیا۔Image result for processing foods

واضح رہے کہ پراسیس شدہ کھانوں میں مختلف بریڈ، کھانے پینے کی ہلکی پھلکی اشیا، مٹھائیاں، کولڈ ڈرنکس، چکن یا مچھلی کے نگٹس، فوری تیار ہونے والے انسٹنٹ سوپ اور بازار میں ملنے والے تیار شدہ پیک کھانے شامل ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

افغان مہاجرین کی واپسی کیلئے عالمی برادری سے کردار ادا کرنے کا مطالبہ

سام سنگ ایس نائن 25 فروری کو متعارف کرایا جائے گا

Comments are closed.

Scroll To Top