تازہ ترین
پبلک اکاونٹس کمیٹی کے اجلاس میں وزارت تعلیم کے آڈٹ کا جائزہ

پبلک اکاونٹس کمیٹی کے اجلاس میں وزارت تعلیم کے آڈٹ کا جائزہ

اسلام آباد (13 فروری 2018) پبلک اکاونٹس کمیٹی کے اجلاس میں وزارت تعلیم وتربیت کے آڈٹ پیراز کا جائزہ لیا گیا۔

پبلک اکاونٹس کمیٹی کا اجلاس خورشید شاہ کی زیر صدارت اسلام آباد میں ہوا۔ اجلاس میں وفاقی وزارت تعلیم و تربیت کے آڈٹ رپورٹس کا جائزہ لیا گیا۔

خورشید شاہ نے کہا کہ خواندگی کی شرح نہ بڑھانے پر ہم سب قصور وار ہیں۔ پانچویں تک 40 فیصد بچے شیلٹرز میں تعلیم حاصل کرتے ہیں۔ اڑتیس فیصد بچے میٹرک میں ڈراپ ہو جاتے ہیں جبکہ صرف 12 فیصد بچے بی اے کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ شہری علاقوں میں 130 بچوں کے لئے ایک استاد جبکہ دیہی علاقوں میں 190 بچوں پر ایک استاد ہے۔ کمیٹی کے استفسار پر سیکرٹری وزارت تعلیم و تربیت خواندگی کی تعریف بھی نہ بتاسکے۔

جس پر خورشید شاہ نے کہا کہ آپ حکومت کو یہ بریفنگ اور سروے دیں گے تو پھر اللہ ہی حافظ ہے۔

یہ بھی پڑھیے

چوہدری نثار نے ڈان لیکس رپورٹ پبلک کرنے کی دھمکی دے دی

سینٹ انتخابات: کاغذات نامزدگی سے متعلق پبلک نوٹس جاری

Comments are closed.

Scroll To Top