تازہ ترین
ٹیسٹ اورون ڈےلیگ کا جلد آغاز

ٹیسٹ اورون ڈےلیگ کا جلد آغاز

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے افغانستان اورآئرلینڈ کوٹیسٹ اسٹیٹس دے دیا۔جس کے بعد ٹیسٹ کرکٹ کااستحقاق رکھنے والے ممالک کی تعداد بارہ ہوگئی۔نئے ممالک کی شمولیت کے بعد دوڈویژن پرمبنی ٹیسٹ کرکٹ کاتصوربھی حقیقت میں ڈھلنے کے قریب ہے۔نئی تجاویزکے مطابق ٹیسٹ کی ٹاپ نوٹیمیں ایک دوسرے کے خلاف چارسالہ سائیکل کے دوران کم ازکم بارہ سیریز ضرور کھیلیں گی۔ہرٹیم چھ ہوم اورچھ اوے سیریز کھیلیں گی۔ ہرسیریز کم ازکم دوٹیسٹ پرمبنی ہوگی۔زمبابوے اورنئے ٹیسٹ ممبرزافغانستان اورآئرلینڈ ایک دوسرے کے ساتھ ٹیسٹ میچز کھیل سکیں گی۔ جبکہ دیگر ٹیسٹ ممالک اپنے شیڈول میں گنجائش کے مطابق تینوں ممالک سے ٹیسٹ کھیل سکیں گے۔کسی بھی ٹیسٹ سیریز سے قبل وارم اپ میچ کے بجائے زمبابوے،آئرلینڈیاافغانستان سے ٹیسٹ بھی کھیلا جاسکتاہے۔

Related imageآئی سی سی ٹیسٹ لیگ کا آغاز ورلڈکپ دوہزارانیس کے فوری بعد اور ورلڈکپ دوہزارتئیس سے قبل اختتام ہوگا۔لیگ کے ختم ہونے پر دو بہترین ٹیموں کے درمیان ہوم اوراوے کی بنیاد پر دو،دوپلے آف ٹیسٹ کھیلے جائیں گے۔ جس کی فاتح ٹیم اگلے چارسال کیلئے ٹیسٹ چیمپئن بن جائے گی۔اکتوبرمیں آئی سی سی بورڈ سے منظوری کے بعد ٹیسٹ لیگ کے شیڈول،مالی اموراوردیگر معاملات پرکام شروع کردیا جائے گا۔تمام ٹیمیں باہمی طور پربھی سیریز کھیل سکتی ہیں۔ چارسالہ کیلینڈرایشیزجیسی آئیکون سیریز کی گنجائش بھی رکھی جائے گی۔

Image result for PSL

ٓآئی سی سی نے دوہزارانیس سے تئیس کے سائیکل کے لئے جوشیڈول منظوری کے لئے پیش کیاہے۔ اس میں کوئی پاک،بھارت سیریز شامل نہیں ہے۔کیونکہ بی سی سی آئی نے حکومتی اجازت کے بغیرنیوٹرل وینیو پر بھی پاکستان سے کھیلنے سے انکارکیا ہے۔ پاکستان چارسالہ سائیکل کے دوران مجوزہ طور پرجنوبی افریقا،سری لنکا،بنگلہ دیش،آسٹریلیا،انگلینڈ اورنیوزی لینڈکی میزبانی کرے گا۔ جبکہ آسٹریلیا،نیوزی لینڈ،انگلینڈ،بنگلہ دیش،ویسٹ انڈیزاورسری لنکا کا مہمان بنے گا۔

Related image

مجوزہ ٹیسٹ لیگ کیلئے پہلے چارسالہ سائیکل میں سولہ سیریز کاشیڈول پیش کیاگیاتھا۔ تاہم کم لیکن بامعنی ٹیسٹ کرکٹ کے ماٹوکے تحت اسے بارہ سیریز کردیاگیا۔ دوہزارگیارہ سے پندرہ کے چاربرسوں میں آسٹریلیا،بھارت اورجنوبی افریقا نے بارہ بارہ،انگلینڈ نے تیرہ، پاکستان اورسری لنکا نے چودہ ،چودہ، نیوزی لینڈ نے سولہ،زمبابوے نے نواوربنگلہ دیش نے دس سیریز کھیلیں۔ٹیسٹ لیگ پرعمل سے تمام ٹیموں کویکساں مواقع میسر آئیں گے۔

Image result for Pakistan india test matchesٹیسٹ لیگ کے طرح اآئی سی سی کے گذشتہ اجلاس میں ون ڈے لیگ کا منصوبہ بھی پیش کیاگیا۔ون ڈے لیگ میں بارہ ٹیسٹ ممالک سمیت تیرہ ٹیمیں شرکت کریں گی۔لیگ کی تیرہویں ٹیم مخصوص تاریخ تک رینکنگ کی بنیاد پرکیاجائے گا۔ ون ڈے لیگ دوسالہ سائیکل پرمنی ہوگی۔تمام تیرہ ٹیمیں دوسالہ سائیکل کے دوران بارہ کے بجائے آٹھ سیریز کھیلیں گی۔ جن میں سے چارہوم اورچاراوے سیریز ہوں گی۔ ون ڈے لیگ کی ہرسیریز تین میچوں پرمشتمل ہوگی۔ ٹیمیں باہمی مشاورت سے پانچ میچوں کی سیریز بھی کھیل سکتی ہیں۔ لیکن انہیں پوائنٹس تین میچوں کے ہی دیئے جائیں گے۔

Image result for Pakistan india test matches
بھارتی ہٹ دھرمی کے پیش نظرون ڈے لیگ کے مجوزہ شیڈول میں بھی کوئی پاک،بھارت سیریز نہیں رکھی گئی۔پاکستان کرکٹ ٹیم دوہزاربیس سے بائیس کے دوسالہ سائیکل میں ون ڈے سیریز کے لئے آسٹریلیا،زمبابوے،نیوزی لینڈ اور ویسٹ انڈیزسے ہوم اور افغانستان،لیگ کی تیرہویں ٹیم،انگلینڈ اور جنوبی افریقا سے اوے سیریز کھیلے گا۔

Image result for Pakistan india test matches
آئی سی سی ٹیسٹ اورون ڈے لیگ کے لئے ایگزیکٹیوبورڈ اکتوبر میں منصوبے کی توثیق کرے گا۔جس کے بعد اس کی شیڈولنگ اور دیگر امور پرکام شروع کردیاجائے گا۔منصوبے پرعمل درآمدکے ذریعے کرکٹ گورننگ باڈی کے تمام ممبرممالک کودونوں طرزکی کرکٹ میں کھیلنے کے یکساں مواقع میسرآئیں گے۔

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top