تازہ ترین
وفاقی کابینہ نے اکیس نکاتی ایجنڈے کی منظوری دے دی

وفاقی کابینہ نے اکیس نکاتی ایجنڈے کی منظوری دے دی

اسلام آباد:(08نومبر، 2018)وفاقی کابینہ نے پاکستان اور سری لنکا کے درمیان کوسٹ گارڈز کے حوالے سے وزارت ساحلی امورکے معاہدے کی منظوری دے دی ہے جبکہ پاکستان اور سوڈان کے مابین سیاحت اور جنگلی حیات کے تحفظ کے حوالے سے معاہدہ بھی کابینہ نے منظور کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی کابینہ کا اجلاس وزیرِاعظم عمران خان کی زیرصدارت ہوا،جس میں وفاقی کابینہ نے اکیس نکاتی ایجنڈے کی منظوری دے دی ہے۔ اس اینجڈے میں غیرملکی سیلولر کمپنی کے ساتھ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی ٹیلنٹ پروگرام کے معاہدے کی منظوری بھی شامل ہے۔

اس کے علاوہ کابینہ کی جانب سےنیول چیف ایڈمرل ظفر محمود عباسی کیلئے ترک حکومت کا اعلیٰ میڈل قبول کرنے کی منظوری دی گئی ہے، جبکہ پاکستان اور نائجیریا کے مابین سفارتی تعلقات کےفروغ کی بھی منظوری دی گئی۔وزیراعظم کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں نئے چیئرمین ٹی سی پی کے تقرری کی بھی منظوری دی گئی، جبکہ وزارت خزانہ کےنئے ادارے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے چیف ایگزیکٹو کے تقرر کی سمری منظور کی گئی۔

اسکے علاوہ وزارت داخلہ کے کی جانب سے پانچ مشکوک افراد کی حفاظتی گرفتاری کی منظوری کی سمری بھی منظور کرلی گئی، اجلاس میں وفاقی کابینہ نے اسٹیٹ بینک اور تاجکستان کے مرکزی بینک کے درمیان نگرانی کی مفاہمت کی دستاویز پر دستخط کی منظوری بھی دی۔وزیراعظم کی زیرصدارت اجلاس میں 2017 کے پارلیمنٹیرین اورٹیکس دہندگان کی ٹیکس ڈائریکٹری جاری کرنے اور کابینہ کی وزارت صنعت کی جانب سے انجینئرنگ ڈویلپمنٹ بورڈ کی تنظییم نوکی منظوری دی گئی۔

اجلاس میں وفاقی کابینہ کے فیصلوں پر عملدرآمد رپورٹ پیش کی گئی، جس پر کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے گذشتہ فیصلوں کی توثیق کی۔

وفاقی وزرا کے بیرون ملک علاج پر پابندی عائد

اس سے قبل وفاقی کابینہ کے اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ کے اراکین کے بیرون ملک علاج پر پابندی عائد کی تھی ، پابندی کا اطلاق وفاقی وزرا وزرائے مملکت، معاونین خصوصی پر ہوگا، جبکہ وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر کابینہ نے نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے۔گذشتہ روز اقتصادی رابطہ کمیٹی کااجلاس وزیر خزانہ اسد عمر کی صدارت میں ہوا،جس میں کاشتکاروں کے لئے مناسب مقدار میں کھاد کی دستیابی یقینی بنانے کےلئے فوری طور پر پچاس ہزار ٹن یوریا درآمد کرنے کی ہدایت کی گئی، اجلاس میں فاطمہ فرٹیلائیزر اورایگری ٹیک فرٹیلائیزر پلانٹس کو گیس کی فراہمی کی بھی اجازت دی گئی تھی۔
کمیٹی نے پاکستان اسٹیٹ آئل کو گردشی قرضے کی رقم کے اجرا کامعاملہ موخر کیا تھا، اس کے علاوہ کمیٹی نے پاکستان اسٹیل ملز کے ملازمین کو ستمبر کےمہینے کی تنخواہوں کی ادائیگی کی منظوری دی تھی، اجلاس میں پاکستان اسٹیل ملز کے وفات پانےوالے ریٹائرڈ ملازمین کی بیواوں کو چار ماہ کی رکی ہوئی پنشن کی ادائیگی کے لئے رقم کے اجرا کی بھی منظوری دی گئی تھی۔

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے وزارت پیداوار سے کہا کہ وہ پاکستان اسٹیل ملز کے مسئلے کو مستقل بنیادوں پر حل کر نے کے لئے تجاویز دے۔

یہ بھی پڑھیے

اقتصادی رابطہ کمیٹی نے گندم کی سپورٹ قیمت 1300روپے فی من مقرر کردی

سابق حکومت کی پالیسیوں کی وجہ سے ادارے تباہ ہوئے، مراد سعید

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top