تازہ ترین
وفاقی حکومت نے جنداللہ کو کالعدم تنظیم قرار دے دیا

وفاقی حکومت نے جنداللہ کو کالعدم تنظیم قرار دے دیا

اسلام آباد: (13 فروری 2018) وفاقی حکومت نے جنداللہ کو کالعدم تنظیم قرار دیتے ہوئے اسے انسداد دہشتگردی ایکٹ کے تحت شیڈول ون میں رکھ دیا ہے۔ حکومت کی جانب سے باقاعدہ نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا ہے۔

وفاقی حکومت کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق جند اللہ کو انسداد دہشتگردی ایکٹ 1997ء کے تحت کالعدم قرار دے کر انسداد دہشتگردی ایکٹ کے تحت شیڈول ون میں رکھا گیا ہے۔

کالعدم تنظیموں کو عطیات دینے پر پابندی

اس سے قبل یکم جنوری کو ایس ای سی پی نے کالعدم تنظیموں اور ان سے منسلک افراد کو عطیات دینے پر پابندی لگائی تھی۔

ایس ای سی پی کے مطابق کمپنیاں اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل کی پابندیوں کی فہرست میں موجود تنظیموں اور افراد کو نقد رقم عطیہ نہیں کرسکتیں۔ یو این سلامتی کونسل نے القاعدہ، طالبان، جماعت الدعوۃ، فلاح انسانیت فاؤنڈیشن، لشکر طیبہ اور ان سے منسلک افراد پر پابندیاں لگا رکھی ہیں۔ کالعدم تنظیموں اور منسلک افراد پر سفری پابندیاں عائد ہیں۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

ایس ای سی پی کے مطابق اثاثہ جات منجمد کیے گئے ہیں اور ان کو اسلحہ کی فراہمی پر پابندی ہے۔ کالعدم تنظیموں پر عائد پابندیوں کی خلاف ورزی پر ایک کروڑ روپے تک جرمانہ ہو سکتا ہے۔

دوسری جانب اسلام آباد میں جماعت الدعوة سمیت تمام کالعدم تنظیموں کی سرگرمیوں پر پابندی کیلئے دفعہ 144 نافذ کی گئی۔ ڈپٹی کمشنر کی جانب سے جاری ہونے والے نوٹیفیکیشن کے مطابق کسی قسم کی فنڈریزنگ، سڑکوں پر بینرز آویزاں یا کسی قسم کی کوئی  تقریبات منعقد  نہیں کرسکیں گی۔نوٹیفیکیشن کے مطابق پابندی کا اطلاق فوری طور پر نافذالعمل اور دو ماہ تک موثر  رہے گا۔ ڈپٹی کمشنر نے 71  کالعدم تنظیموں کی فہرست بھی اسسٹنٹ کمشنرز کو ارسال کردی ہے۔

ڈپٹی کمشنر نے حکم جاری کیا کہ دو روز میں تمام اسسٹنٹ کمشنرز اپنے اپنے علاقوں کا جائزہ لے کر اپنی رپورٹس جمع کرائیں، جبکہ تمام کالعدم تنظیموں کی سرگرمیوں پر کڑی نظر رکھنے کی بھی ہدایت جاری کی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

کالعدم تنظیموں کو عطیات دینے پر پابندی عائد

سہراب گوٹھ سے کالعدم تنظیم کے16 مشتبہ دہشت گرد گرفتار

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top