تازہ ترین
ورسٹائل اداکار قاضی واجد کی آج پہلی برسی ہے

ورسٹائل اداکار قاضی واجد کی آج پہلی برسی ہے

کراچی:(11 فروری 2019) صدارتی اعزاز یافتہ ہردلعزیز، معروف اداکار قاضی واجد کو ہم سے بچھڑے ایک برس بیت گیا ہے۔

قاضی واجد چھبیس مئی انیس سو تینتالیس میں انڈیا کے شہر گوالیار میں  پیدا ہوئے۔ انٹر تک تعیم حاصل کی انیس سو سینتالیس  میں قیام پاکستان کے بعدفیملی کے ہمراہ پاکستان آگئے پہلا قیام لاہور میں کیا اس کے بعد کراچی شفٹ ہوگئے۔

ان کے والدکا نام ابو واحد تھا چار بھائیوں اور دو بہنوں میں ان کا نمبر چوتھا تھا والد صاحب ان کو ڈاکٹر بنانا چاہتے تھے جبکہ قاضی واجد خود اجینئر بننا چاہتے تھےمگر انیس سو اٹھاون میں ان کے اسکول کے پرنسپل انہیں ریڈیو پاکستان لے گئے۔

اور یہیں سے ان کی صدا کاری کا آغاز ہوا۔ لوگوں نے ان کی صدا کاری کو بہت سراہا۔  یہاں تک کہ خود ان کے والد جو کہ ریڈیو پر کام کرنے کے سخت خلاف تھے، ان کی خوبصورت صدا کاری کے فین ہو گئے۔ اسی دوران ان کی فلم بیداری ریلز ہوئی جس کے بعد انہیں مزید  کئی آفرز ہوئیں۔

اس کے ساتھ ہی ریڈیوپاکستان پرایک پروگرام شروع ہوا کا نام تھا قاضی جی کا وعدہ یہ پروگرام عوام میں پہت مقبول ہوا اور پچیس سال جاری رہا۔

اور اسی پروگرام نے قاجی واجد کو شہرت کی بلندیوں پر پہنچادیا۔اس کےساتھ ساتھ ریڈیو سے چلنے والے کئی پروگرام میں انہون نے اپنی صدا کاری کے جوہر دیکھائے۔ قاضی واجد ریڈیو کے ساتھ ساتھ تھیٹر پر بھی کام کرتے رہے۔ انیس سو ستاسٹھ میں قاضی واجد نے ٹی وی کا رخ کیا۔

کراچی میں ٹی وی کی نمائش پر پیش کئے جانے  والے پہلے لائیو پروگرام میں قاضی واجد نے پرفارم کیا۔ انیس سو چوہتر میں ریڈیو کے ڈرامہ خدا کی بستی کو جب ٹی وی پر پیش کیا گیا تو اس میں  بھی قاضی صاحب نے اپنی اداکاری کو منوایا۔

آپ کی شادی انیس سو اٹھتر میں مہر قاضی سے ہوئی۔ ان کے بچوں میںفضیلہ قاضی نے بھی شوبز میں صلاحیتوں کا لو ہا منوایا۔

انہوں نے پی ٹی وی بے شمار کامیاب ڈراموں میں کام کیا جن میں شمع، ہم سے جدا نہ ہونا، مرزا غالب بندر روڈ پر خالہ خیرن، تنہایاں ،کسک،ہوائیں ، دھوُپ کنارے،ان کہی قابل ذکر ہے۔

جبکہ نجی چینلز کے ڈراموں میں قربت ،پہچان ،پل دو پل راجو راکٹاور دوراھا نے بہت کامیا بی حاصل کی۔ ان کی بہترین خدمات پر انیس سو اٹھاسی میں انہیں پرائڈ ااف پرفارمنس سےنوازاگیا ۔

شوبز کی یہ عظیم ہستی اٹھاسی برس کی عمر میں گیارہ  فروری دو ہزار اٹھارہ کو  اپنے خالق حقیقی سے جاملی۔

Comments are closed.

Scroll To Top