تازہ ترین
نون لیگ کا کراچی کے 15 حلقوں سے امیدوار میدان میں اتارنے کا فیصلہ

نون لیگ کا کراچی کے 15 حلقوں سے امیدوار میدان میں اتارنے کا فیصلہ

اسلام آباد: (25 جون ، 2018، بہزاد سلیمی) مسلم لیگ (ن) نے کراچی سے قومی اسملبی کے پندرہ حلقوں سے امیداور میدان میں اتارنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ صدر شہباز شریف نہ صرف خود کراچی کے حلقہ این اے 249 سے انتخاب لڑیں گے بلکہ سابق وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل، سینیٹر سلیم ضیاء اور سینیٹر مشاہداللہ خان کے صاحبزادے افنان اللہ خان بھی قسمت آزمائی کریں گے۔

مسلم لیگ (ن) سندھ کے صدر اور صوبائی پارلیمانی بورڈ کے چیئرمین شاہ محمد شاہ نے کراچی سے مسلم لیگ (ن) کےامیدواروں کے نام فائنل کرلیے ہیں۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

صوبائی پارلیمانی بورڈ کی جانب سے تیارکردہ فہرست کے مطابق این اے 241 سے راؤ  محمد جمیل، این اے 242 سے حاجی شرافت خان اور این اے 243 سے شیخ محمد شاہ جہاں امیدوار ہوں گے۔ این اے 244 سے مفتاح اسماعیل اور این اے  245 سے خواجہ طارق نذیر کو ٹکٹ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔این اے 246 سے سینیٹر سلیم ضیاء اور این اے 247 سے ڈاکٹر افنان اللہ میدان میں اتریں گے۔

این اے 248 سے سلمان خان جبکہ این اے 249 سے مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے خود میدان میں اتریں گے۔این اے 250 سے سید منور رضا، این اے 251 سے فہد شفیق (ن) لیگ کے امیدوار ہوں گے۔

این اے 252 سے محمد ایوب خان اور این اے 253 سے خالد ممتاز کو پارٹی ٹکٹ جاری کیا جائے گا۔اس کے علاوہ این اے 255 سے ناصرالدین محمود اور این اے 256 سے دوست محمد فیضی امیدوار ہوں گے۔

ذرائع کے مطابق شہباز شریف اپنے دورہ کراچی کے دوران صوبائی پارلیمانی بورڈ کی سفارشات کی روشنی میں کراچی کے امیدواروں کو ٹکٹوں کے اجراء کی منظوری دیں گے۔

مسلم لیگ (ن) نے کراچی سے انتخابی مہم کا آغاز کردیا

اس سے قبل مسلم لیگ (ن) نے اپنی انتخابی مہم کا آغاز کردیا۔ صدر مسلم لیگ (ن) شہباز شریف نے ایف پی سی سی آئی کراچی میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ چند سال قبل کراچی میں خوف کا عالم تھا، بھتہ خوری، ٹارگٹ کلنگ، دہشتگردی تھی۔

ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

اپنے خطاب میں مسلم لیگ (ن) کے صدر نے کہا کہ 2013ء میں پاکستان کو دو چیلنجز تھے، سب سے بڑا چیلنج لوڈ شیڈنگ تھا، توانائی بحران کےباعث برآمدات کونقصان پہنچ رہاتھا لیکن ہم نے پانچ سال کے دوران بہترین کارکردگی دکھائی اور آج ہم لوڈشیدنگ فری ہوچکے ہیں۔

صدر پاکستان مسلم لیگ (ن) کا کہنا تھاکہ جس طرح بجلی کا بحران حل کیا کراچی میں پانی کا بحران بھی ایسے حل ہونا چاہیے، کراچی کو ٹینکر مافیا سے نجات دلانا ہوگی،

اگر دوبارہ موقع ملا تو تین سال میں شہر کے ہر گھر میں پینے کا صاف پانی ہوگا، چھ ماہ میں شہر میں کوڑے اور غلاظت کے ڈھیر ختم کرنے ہیں، کراچی کو ایشیا کا نہیں بلکہ ساری دنیا کا مثالی شہر ہونا چاہیے۔سابق وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ کوئی بلند وبانگ دعوےکرنے نہیں آیا، کراچی کے کھوئے ہوئے مقام کو واپس دلوانے میں اپنا کردار ادا کرینگے، کراچی کے لیے صوبائی فنڈز پر انحصار نہ کیا جائے، صوبائی حکومت کےساتھ وفاقی حکومت کو بھی کردار ادا کرنا ہوگا۔

ان کا کہنا تھاکہ کراچی میں پبلک ٹرانسپورٹ ایک بڑا مسئلہ ہے، پبلک ٹرانسپورٹ بھی مہیاء کرنا اولین ذمہ داری ہے، جو لاہور میں میٹرو بس بنی پہلے کراچی میں بننی چاہیے تھی، شہر کے پبلک ٹرانسپورٹ، پانی، سالڈ ویسٹ مینجمنٹ اور انفرا اسٹرکچر کو ٹھیک کریں گے کیونکہ اچھے روڈ اور انفرا اسٹرکچر نہیں بنائیں گے تو شہر جام ہو جائے گا، یہ ویژن (ن) لیگ کا کراچی کے لیے ہے۔شہبازشریف نے کہا کہ کالا باغ ڈیم کھٹائی میں پڑ گیا، کالاباغ قومی وحدت کو نقصان پہنچاکر نہیں بنایا جاسکتا، ہمیں بھاشا ڈیم کو ترجیح دینا ہوگی، ہم نے 20 سال ضائع کردیئے، یہاں کوئی پوائنٹ اسکورننگ نہیں کررہا اس حمام میں سب ننگے ہیں کیونکہ کسی نے کام نہیں کرنا تھا، سب بہانے ڈھونڈتے رہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمیں بھاشا ڈیم پر توجہ دینا ہوگی، ڈیم کی زمین ڈھونڈی جاچکی ہے اور اس پر 100 ارب کی سرمایہ کردی، پانچ سال میں اس ڈیم کا مکمل ہونا مشکل ہے لیکن اللہ نے موقع دیا تو پانچ سال میں بھاشا ڈیم کو 80 فیصد تک مکمل کردیں گے، اس سے 4 ہزار میگاواٹ سستی بجلی پیدا ہوگی۔شہبازشریف نے بھارت سے معاشی جنگ جیتنے کے عزم کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ بھارت ہمیں عسکری لڑائی میں شکست نہیں دے سکتا لیکن اب ہمیں اس سے معاشی جنگ لڑنا ہے، بھارت سے ٹیکسٹائل ٹائٹل واپس لانا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

عام انتخابات ملتوی کرنے کی درخواستیں مسترد

http://urdu.abbtakk.tv/na-95-tribunal-allows-imran-khan-to-contest-election/http://urdu.abbtakk.tv/na-95-tribunal-allows-imran-khan-to-contest-election/

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top