تازہ ترین
نقیب اللہ قتل کیس: تین ملزمان 7 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

نقیب اللہ قتل کیس: تین ملزمان 7 روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

کراچی: (12 فروری 2018) انسداد دہشتگردی  کی عدالت نے نقیب اللہ قتل کیس میں ملوث تین ملزمان کو سات روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا ہے۔

انسداد دہشتگردی کے منتظم جج کی عدالت میں ملزمان کو پیش کیا گیا۔ دوران سماعت تفتیشی افسر کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ نقیب قتل کیس میں گرفتار تین پولیس اہلکاروں کو عدالت میں پیش کیا گیا ہے۔ گرفتار ملزمان میں کانسٹیبل عبدل علی، شفیق احمد اور غلام نازل شامل ہیں جو راؤ انوار کی ٹیم کا حصہ ہیں۔عدالت سے ملزمان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا بھی کی گئی۔ عدالت نے تمام دلائل سننے کے بعد ملزم عبدال علی، شفیق احمد اور غلام نازل کو سات روز کے جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔واضح رہے کہ نقیب قتل کیس میں اب تک 9 ملزمان گرفتار کیے جاچکے ہیں۔ نقیب قتل کیس میں مرکزی ملزم راؤ انوار تاحال مفرور ہے۔

نقیب اللہ محسود کے نام پر کالج کی تعمیر کا اعلان

اس سے قبل 06 فروری کو محسود اور وزیر قبائل کے جرگے نے وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سے ملاقات کی تھی جس دوران جرگے کے اراکین نے نقیب اللہ محسود کے قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا۔اس موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ نقیب اللہ کے کیس میں انصاف کے تمام تقاضوں کو پورا کیا جائے گا۔ قاتلوں کی گرفتاری کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ پوری قوم قبائلی علاقوں کے عوام کی قربانیوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں قبائلی عوام نے بے پناہ قربنانیاں دیں ہیں۔اس موقع پر وزیراعظم نے شاہد خاقان عباسی نے نقیب اللہ محسود کے نام پر وزیرستان میں کالج تعمیر کرانے کا اعلان بھی کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

نقیب اللہ محسودکا معاملہ صرف صوبائی نہیں بلکہ ریاست کا معاملہ ہے، وزیراعظم

وزیراعظم کا نقیب اللہ محسود کے نام پر کالج کی تعمیر کا اعلان

 

Comments are closed.

Scroll To Top