تازہ ترین
میانمار: ہجرت کیلئے سرحد عبور کرتے ہوئے کئی مسلمان بارودی سرنگوں کا نشانہ بن گئے

میانمار: ہجرت کیلئے سرحد عبور کرتے ہوئے کئی مسلمان بارودی سرنگوں کا نشانہ بن گئے

ینگون (12 ستمبر 2017) میانمار کی سرزمین روہنگیا مسلمانوں کے لئے تنگ کردی گئی ہے۔ جان بچاکر ہجرت کرنا بھی ان کے لئے مشکل ہوگیا ہے۔ میانمار فوج کی جانب سے بنگلہ دیش سرحد کے لئے قریب بچھائی گئی بارودی سرنگوں کا نشانہ بن کر کئی مسلمان لہولہان ہوچکے ہیں۔

میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے جس میں اب تک ہزاروں مسلمانوں کو قتل کیا جاچکا ہے جب کہ درجنوں گھر جلا دیئے گئے ہیں۔ میانمار میں زمین تنگ ہونے کے باعث اب تک 2 لاکھ سے زائد مسلمان بنگلہ دیش ہجرت کرچکے ہیں اور وہاں کیمپوں میں زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں۔

انسانی حقوق کی تنظیم ایمنیسٹی انٹرنیشنل نے سرحد پر بارودی سرنگیں بچھانے کا الزام عائد کیا تھا۔ برطانوی خبر رساں ایجنسی کے مطابق جان بچا کر بھاگنے والے کئی افراد ان بارودی سرنگوں کا نشانہ بن چکے ہیں جو اس وقت بنگلہ دیش کے اسپتالوں میں زیرعلاج ہیں۔

یہ بھی پڑھیئے

میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی جاری

میانمار کے سفیر دفتر خارجہ طلب: احتجاجی مراسلہ حوالے کیا

Comments are closed.

Scroll To Top