تازہ ترین
لاہور چڑیا گھر میں 8 سالہ بنگالی شیرنی ہلاک

لاہور چڑیا گھر میں 8 سالہ بنگالی شیرنی ہلاک

لاہور (13 مارچ 2018) سہولیات کے فقدان کے باعث لاہور چڑیا گھر ویران ہونے لگا۔ انتظامیہ کی لاپرواہی کے باعث جانوروں کی اموات میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔ گزشتہ 2 ماہ کے دوران بنگالی شیرنی، 2 چیتے، مکاو اور 24 بطخیں چل بسیں۔

چڑیا گھر میں ایک کے بعد ایک جانور کی موت نے انتظامیہ کی کارکردگی کا پول کھول دیا۔ بہترین نگہداشت نہ ہونے کے باعث بلڈ پیرا سائٹس کے مرض میں مبتلا 8 سالہ بنگالی شیرنی چل بسی۔ بنگالی شیرنی پنجرے کے باہر خندق میں مردہ پائی گئی۔گزشتہ 2 ماہ کے دوران چڑیا گھر میں نایاب نسل کے جانور جان سے گئے۔ جن میں بیرون ملک سے لایا گیا چیتوں کا جوڑا، مکاو، چوبیس بطخیں اور ہرن کا بچہ شامل ہے۔

لیکن اس کے باوجود انتظامیہ کی جانب سے کوئی اقدامات نہیں کیے گئے۔ نایاب نسل کے جانوروں کی ہلاکت پر چڑیا گھر کی رونقیں بھی ماند پڑنے لگیں۔

سیاحوں نے بیرون ملک سے لائے گئے جانوروں کی زندگیاں بچانے کے لئے انہیں سازگار ماحول فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

لاہور: رائیونڈ اسپتال میں ڈاکٹروں کی غفلت، بچے کی گھر کے واش روم میں ولادت

لاہور: دو مختلف حادثات میں ایک شخص جاں بحق، پانچ زخمی، اسپتال منتقل

Comments are closed.

Scroll To Top