تازہ ترین
لاہور: افسر شاہی کا عدلیہ کی طرز پر آئینی تحفظ کا مطالبہ

لاہور: افسر شاہی کا عدلیہ کی طرز پر آئینی تحفظ کا مطالبہ

لاہور: (23 فروری 2018) پنجاب کی افسر شاہی سابق ڈی جی ایل ڈی اے احد چیمہ کی گرفتاری پر تلملا اٹھی۔ کام چھوڑ کر سور جوڑ لیے اور پھر حکومت کو ایک شاہانہ چارٹر آف ڈیمانڈ پیش کردیا۔

سابق ڈی جی نیب احد چیمہ کیخلاف نیب حرکت میں آیا تو بیوروکریسی ہل کر رہ گئی۔ لاہور میں ڈی ایم جی آفیسرز نے سر جوڑ کر چارٹر آف دیمانڈ تیار کرکے پنجاب کابینہ کو بھجوا دیا۔

افسر شاہی کے پہلا شاہانہ مطالبات میں سے  پہلا یہ ہے کہ کسی بھی سول سرونٹ کے خلاف تحقیقات چیف سیکرٹری کے حکم پر سینئر بیوروکریٹس پر مشتمل خصوصی ٹربیونل سے کرائی جائیں۔ خصوصی ٹربیونل تحقیقات کے بعد سول سرونٹس کا کیس نیب یا کسی دوسرے ادارے کو بھجوائے۔ کسی افسر پر کیس بننے کی صورت میں حکومت وکلا کی ٹیم فراہم کرکے اس کی قانونی مدد کرے۔ حکومت سول سرونٹس کی تضحیک پر فوری اقدامات کرے۔مقبول احمد دھاولہ،  آفتاب چیمہ، محمد علی نیکوکارا، وسیم اجمل، عامر عقیق خان اور صفدر ورک کی تضحیک پر معافی مانگی جائے۔

افسر شاہی نے وزیر اعلیٰ آفس سمیت سیاسی دفاتر سے جاری ہونے والے ڈائریکٹ احکامات ماننے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ اب تمام احکامات چیف سیکریٹری اور آئی جی پنجاب کے دفتر کے ذریعے بھجوائے جائیں۔افسر شاہی کا کہنا ہے کہ حکومت انٹیلی جنس ایجنسیز کے ذریعے افسران کی ذاتی زندگی کی کھوج لگانا بند کرے اور کسی افسر کے ذاتی معاملات اس کے کیرئیر پر اثر انداز نہیں ہونے چاہئیں۔ اس کے ساتھ ساتھ دوسروں کے الاؤنس بند کرنے والی بیوروکریسی نے اپنے لیے ایگزیکٹو الاؤنس کا بھی مطالبہ کردیا ہے۔

پنجاب کی افسر شاہی کا کہنا ہے کہ اس کے تمام مطالبات پر عملدرآمد یقینی بنانے کیلئے ضروری قانون سازی بھی کی جائے۔

یہ بھی پڑھیے

احد چیمہ کی گرفتاری و احتساب پر احتجاج شرمناک ہے، عمران خان

احد چیمہ کی گرفتاری پر پنجاب بیورو کریسی نے دفاتر کی تالا بندی کردی

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top