تازہ ترین
فافن نے ضمنی انتخابات سے متعلق مشاہدے پر مبنی رپورٹ جاری کردی

فافن نے ضمنی انتخابات سے متعلق مشاہدے پر مبنی رپورٹ جاری کردی

اسلام آباد: 16 اکتوبر 2018) غیرسرکاری تنظیم فری اینڈ فیئر الیکشن نیٹ ورک (فافن) نے ضمنی انتخابات سے متعلق مشاہدے پر مبنی رپورٹ جاری کردی ہے۔ رپورٹ کے مطابق ضمنی الیکشن میں ووٹرز کا ٹرن آؤٹ عام انتخابات کی نسبت مایوس کُن رہا۔ پولنگ اسٹیشنز پر ووٹوں کی گنتی اور عبوری نتائج کی تیاری کے مراحل زیادہ بہتر اور شفاف رہے۔

فافن کی رپورٹ کے مطابق قومی اسمبلی کے حلقوں میں عام انتخابات کی نسبت خواتین کا ٹرن آؤٹ 54 فیصد جبکہ مردوں کا ٹرن آؤٹ 44 فیصد کم رہا تاہم تمام حلقوں میں خواتین کا ٹرن آؤٹ مجموعی ٹرن آؤٹ کے 10 فیصد سے زیادہ رہا۔

رپورٹ کے مطابق قومی اسمبلی کے حلقوں کا ٹرن آؤٹ عام انتخابات کی نسبت 51.9 فیصد سے گر کر 26.5 فیصد پر آگیا۔ جبکہ پنجاب اسمبلی کے حلقوں کا ٹرن آؤٹ 57.8 فیصد سے گر کر 43.7 فیصد ہوگیا۔رپورٹ کے مطابق خیبرپختونخواہ اسمبلی کے حلقوں کا ٹرن آؤٹ 45.4 فیصد سے کم ہو کر 21.7 فیصد رہ گیا۔ جبکہ سندھ اسمبلی کے حلقوں کا ٹرن آؤٹ 50.9 فیصد سے کم ہو کر 36.8 فیصد پر آگیا۔

رپورٹ کے مطابق کل 374 امیدواروں میں سے صرف 27 سیاسی جماعتوں کی ٹکٹوں پر الیکشن لڑے، باقی آزاد امیدوار تھے۔ 35 حلقوں کی انتخابی فہرستوں میں جولائی 2018ء کی نسبت 42 ہزار 810 ووٹرز کا اضافہ ہوا تھا۔

رپورٹ کے مطابق ضمنی انتخابات کے دوران بے قاعدگیوں کی تعداد ماضی کے انتخابات کی نسبت کم رہی تاہم تشدد کے 27 واقعات رپورٹ ہوئے۔

یہ بھی پڑھیے

ضمنی انتخاب میں کامیاب ہونے والے امیدواروں سے انتخابی مہم کے اخراجات کی تفصیلات طلب

مبینہ انتخابی دھاندلی کی تحقیقات کیلئے 30 رکنی پارلیمانی کمیٹی قائم

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top