تازہ ترین
عدالت کا این اے 73 میں خواجہ آصف کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کا حکم

عدالت کا این اے 73 میں خواجہ آصف کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کا حکم

اسلام آباد:(08 اگست 2018) لاہور ہائی کورٹ نے قومی اسمبلی کی نشست این اے 73 سیالکوٹ میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی درخواست مسترد کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے رہنما خواجہ آصف کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کی اجازت دے دی۔

اس سے قبل لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس مامون الرشید نے تحریک انصاف کے عثمان ڈار کی خواجہ آصف کی کامیابی کا نوٹیفکیشن روکنے کیلئے درخواست کی سماعت کی،درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ میں نے این اے 73 سیالکوٹ سے انتخاب لڑااوردوسرے نمبرپررہا،الیکشن کے روزریٹرننگ افسرنے فارم 45 پولنگ ایجنٹس کوفراہم نہیں کیا،عدالت سے استدعا ہے کہ تمام حلقوں میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم دیا جائے اور خواجہ آصف کی کامیابی کا نوٹیفکیشن روکنے کا حکم دیا جائے۔عدالت نے تحریک انصاف کے عثمان ڈار کی ووٹوں کی دوبارہ گنتی کی درخواست مسترد کردی، واضح رہے کہ این اے 73 سے ن لیگ کے خواجہ آصف 1406 ووٹوں سے کامیاب ہوئے تھے۔دوسری جانب جمشید دستی نے اپنے حلقے میں دوبارہ گنتی کے لیے سپریم کورٹ میں اپیل دائر کی تھی جس میں مؤقف اختیار کیا کہ رات 11 بجے لائٹ بند ہوگئی اور اگلے روز دن دو بجے نتیجہ دیا گیا لہٰذا حلقے میں دوبارہ گنتی کرائی جائے۔چیف جسٹس نے جمشید دستی کی اپیل مسترد کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ اپنے متعلقہ فورم الیکشن کمیشن کے پاس جائیں۔یاد رہے کہ عام انتخابات میں پاکستان عوامی راج پارٹی کے سربراہ جمشید دستی کو این اے 182 مظفر گڑھ سے پاکستان پیپلز پارٹی کے مہر ارشاد نے 53 ہزار سے زائد ووٹ لے کر شکست دی جبکہ جمشید دستی کے حصے میں 50 ہزار سے زائد ووٹ آئے۔

یاد رہے کہ 29 جولائی کو بھی قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 73 میں دوبارہ گنتی کے نتیجےمیں پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار عثمان ڈار کے ووٹوں میں اضافہ ہوگیا تاہم اس کے باوجودان کے حریف اور پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف کی جیت برقرار رہی۔

یہ بھی پڑھیے

الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کے نتائج سے متعلق تمام فارمز جاری کر دیئے

خورشید شاہ نے عمران خان کو بڑا ریلیف دے دیا

Comments are closed.

Scroll To Top