تازہ ترین
عدالتی نظام میں اصلاحات کے حوالے سے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع

عدالتی نظام میں اصلاحات کے حوالے سے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع

اسلام آباد: (08 نومبر 2018) عدالتی نظام میں اصلاحات کے حوالے سے قانون و انصاف ڈویژن نے رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروادی ہے۔

رپورٹ کے مطابق وزیر قانون نے تمام متعلقہ افراد اور وزیر اعظم سے ملاقات کی۔ ضابطہ دیوانی میں ترامیم کیلئے اتفاق رائے پایا گیا۔ وفاقی حکومت ضابطہ دیوانی کو موجودہ حالات کے مطابق ڈھالنا چاہتی ہے تاکہ لوگوں کو فوری اور سستا انصاف مہیا کیا جاسکے۔وزیر قانون نے اس سلسلے میں افسران پر مشتمل ایک ٹاسک فورس تشکیل دی ہے۔ ٹاسک فورس موثر نظام انصاف کا جائزہ لے گی۔ شفاف ٹرائل کو یقینی بنانے، مصالحتی نظام کے ممکنات، نظام انصاف سے نااہلی اور کرپشن کو دور کرنے کے اقدامات، سول قانون میں خامیوں کو دور کرنے، شہادت کے قانون میں ترمیم اور ججز کی تعداد بڑھانے پر غور کرےگی۔

جبکہ وزیر قانون نے ٹاسک فورس کو ظفر اقبال کلانوی کی سفارشات پر غور کرنے کی ہدایت کی ہے۔رپورٹ کے مطابق ٹاسک فورس نے ترامیم کے حوالے سے کام شروع کر دیا ہے۔ وزارت قانون کی ٹیم کے چیئرمین وزیر قانون ہوں گے۔ پارلیمانی سیکریٹری برائے قانون اٹارنی جنرل یا ان کا نمائندہ بطور ممبر شامل ہوں گے۔ صوبوں کے ایڈووکیٹ جنرلز اور صوبائی سیکریٹری قانون بھی ممبر ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیے

سپریم کورٹ نے تھر میں ڈاکٹرز اور طبی عملے کی رپورٹ طلب کرلی

سپریم کورٹ نے آئی جی تبادلہ کیس میں جے آئی ٹی تشکیل دے دی

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top