تازہ ترین
شادی ہال مالکان نے میری بات پر ہڑتال کی کال واپس لی، سعید غنی

شادی ہال مالکان نے میری بات پر ہڑتال کی کال واپس لی، سعید غنی

کراچی: (26 جنوری 2019) وزیر بلدیات سندھ سعید غنی نے کہا ہے کہ شادی ہال مالکان نے میری بات پر ہڑتال کال واپس لی۔ میں آج بھی اپنی بات پر قائم ہوں۔ میں شہریوں کے گھر نہیں توڑوں گا چاہے مجھے اپنی سیٹ ہی کیوں نہ چھوڑنی پڑے۔

وزیر بلدیات سندھ سعید غنی نے مشیر اطلاعات مرتضی ٰوہاب کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعلی سندھ اور حکومت سندھ اس معاملے کا بغور جائزہ لے رہی ہے۔ ہماری یقین دہانی پر شادی ہالز والوں نے ہڑتال ختم کردی۔ سندھ حکومت کاروباری افراد ور شہریوں کو پریشان نہیں دیکھ سکتی۔ قانون کے دائرے اور سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں مسئلہ حل کیا جائے گا۔

وزیر بلدیات نے کہا کہ سپریم کورٹ سے درخواست کرکے وقت ضرور لیا جائے گا تاکہ ہالز بک کرانے والے افراد کو مشکل نہ ہو۔ ایس بی سی اے کے اشتہار کی وجہ سے تشویس پھیلی۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے ایس بی سی اے کو اشتہار واپس لینے کی ہدایت کردی ہے۔

وزیر بلدیات نے کہا کہ لاکھوں خاندانوں کی مشکلات دیکھتے ہوئے وزارت چھوڑنے کا کہا تھا۔ ایم کیو ایم نے یہ تاثر دیا کہ سعید غنی پی پی کے بہت سے لوگوں کی جان بچانا چاہتے ہیں۔ ماسٹر پلان ماضی میں نعمت اللہ خان اور مصطفیٰ کمال کے ماتحت تھا۔ محکمہ ماسٹر پلان نے 930 پلاٹ کی حیثیت کو تبدیل کیا۔ 454 پلاٹس کی حیثیت کو پیپلز پارٹی کے دور میں تبدیل کیا گیا۔

مشیر اطلاعات سندھ مرتضیٰ وہاب نے کہا کہ موجودہ صورتحال سیاست سے زیادہ انسانی ہے۔ سیاسی پوائنٹ اسکورنگ کے بجائے سب کو مل بیٹھنا چاہیے۔ پاکستان کوارٹرز سمیت کئی پریشانیوں میں پیپلز پارٹی نے سیاست نہیں کی۔ ٹھوس موقف اپنایا اور عملی اقدام اٹھایا۔

مشیر اطلاعات سندھ نے مزید کہا کہ جس نے دکانیں گرانا تھیں گرادیں۔ ملبہ اٹھانے کیلئے پیسے ہم نے دیے۔ سپریم کورٹ سے نظرثانی کی درخواست بھی سندھ حکومت نے کی تھی۔

Comments are closed.

Scroll To Top