تازہ ترین
سیپرا سائبر کرپشن: ٹھیکیداروں کا مافیا کیخلاف نیب جانے کافیصلہ

سیپرا سائبر کرپشن: ٹھیکیداروں کا مافیا کیخلاف نیب جانے کافیصلہ

کراچی: (11 ستمبر 2017) سیپرا سائبر کرپشن کے معاملے پر سندھ کے متاثرہ ٹھیکداروں نے سیپرا مافیا کے خلاف نیب جانے کا فیصلہ کر لیا ہے، ٹھیکیداروں کا کہنا ہے کہ سیپرا کی جانب سے آئی ڈیز چھپانے کے عوض کروڑوں روپے لئے جاتے ہیں، پیسے طارق روڈ کے فلیٹ اور گلشن حدید میں لئے جاتے تھے۔

سندھ کے متاثرہ ٹھیکداروں نے سیپرا سائبر کرپشن کے معاملے پر مافیا کے خلاف نیب جانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ متاثرہ ٹھیکیدار کا کہنا ے کہ ایم ڈی سیپرا اختر بگٹی، جاوید مہر، عمران اخلاق، فرمان شاہ اور دیگر کے خلاف نیب کو درخواست دیں گے۔

ویڈیودیکھنے کےلیے پلےکا بٹن دبائیں

ٹھیکیداروں کا کہنا ہے کہ آئی ڈیز چھپانے کے عوض کروڑوں روپے لئے جاتے ہیں، پیسے طارق روڈ کے فلیٹ اور گلشن حدید میں لئے جاتے تھے، صرف جیکب آباد میں پونے ایک ارب کا ٹھیکہ چھپایا گیا ہے۔ ٹھیکیداروں نے سوال کیا ہے کہ راتوں رات ایگزیکیوٹو انجینئر جاوید شیخ کو کیوں تعینات کیا گیا؟ 2010 میں سوشل میڈیا پر چیزیں بیچنے والا عمران اخلاق چند برسوں میں کروڑ پتی کیسے بن گیا ہے؟

ٹھیکیداروں نے الزام عائد کیا ہے کہ عمران اخلاق آئی ڈیز چھپانے کے مرکزی کردار ہے، اس کی فیملی بھی امریکا منتقل ہوچکی ہے۔ ذرائع کے مطابق ایم ڈی سیپرا اختر بگٹی بھی جاوید مہر، عمران اخلاق، فرمان شاہ، اور سمیرا کو بچانے میں مصروف ہیں، ایم ڈی سیپرا نے اعتراف کیا ہے کہ ایسی شکایات ضرور ملیں تھیں مگر میں ملوث افسران کے خلاف کارروائی نہیں کر سکتا ہوں، یہ اتنے بااثر ہیں کہ بار بار ہٹانے کے باوجود واپس آجاتے ہیں۔

یہ بھی پڑھئے

کراچی: سیپرا میں سائبر کرپشن کا معاملہ، اب تک کی خبر پر نوٹس

سندھ کی بیوروکریسی میں بڑے پیمانے پر تبدیلیاں

Comments are closed.

Scroll To Top