تازہ ترین
سپریم کورٹ کی آئی ایس آئی کو آبپارہ روڈ کھولنے کیلئے مزید ایک ماہ کی مہلت

سپریم کورٹ کی آئی ایس آئی کو آبپارہ روڈ کھولنے کیلئے مزید ایک ماہ کی مہلت

اسلام آباد:(16 اکتوبر 2018) سپریم کورٹ میں آبپارہ روڈ کی بندش سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی۔ عدالت نے آئی ایس آئی کو آبپارہ روڈ کھولنے کیلئے ایک ماہ کی مزید مہلت دیدی۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی پینچ نے سپریم کورٹ میں آبپارہ روڈ کی بندش سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

چیف جسٹس نے نمائندہ وزارت دفاع برگیڈیئر فلک ناز سے استفسار کیا کہ ہم نے ڈی جی آئی ایس آئی کو بلایا تھا، آپکو دو ماہ کا وقت پہلے دے چکے ہیں،ابھی تک روڈ کیوں نہیں کھولا گیا۔انہوں نے کہا کہ یہ بنیادی انسانی حقوق کا معاملہ ہے، انڈیا میں ایک راستے پر گاندھی کا مجسمہ لگا ہوا تھا، جب روڈ بنایا گیا تو گاندھی کا مجسمہ گرا دیا گیا۔

نمائندہ وزارت دفاع برگیڈیئر فلک ناز نے بتایا کہ جگہ تقریباً کلئیر ہو گئی ہے ابھی ٹریفک کیلیے نہیں کھولی گئی جس پر چیف جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیے کہ خالی روڈ کا عوام کو کیا فائدہ ہو گا جب استعمال میں نہیں ہو گی۔

نمائندہ وزارت دفاع برگیڈیئر نے کہا کہ آلات کی منتقلی میں وقت لگ رہا ہے جس پر چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ آپکو مزید کتنا وقت چاہیے ہم آپکو دے دیتے ہیں۔ تاہم عدالت نے آبپارہ روڈ کھولنے کیلیے مزید چار ہفتوں کی مہلت دیدی۔

یہ بھی پڑھیے

فلیگ شپ ریفرنس: نواز شریف کی کیپٹل ایف زیڈ ای میں ملازمت کا ریکارڈ پیش

پیراگون سٹی کیس: خواجہ سعد اور سلمان رفیق نے نیب میں بیان ریکارڈ کرادیا

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top