تازہ ترین
سندھ ہائیکورٹ، کراچی میں ہیوی ٹریفک کے داخلے پر مکمل پابندی عائد کرنے کا معاملہ

سندھ ہائیکورٹ، کراچی میں ہیوی ٹریفک کے داخلے پر مکمل پابندی عائد کرنے کا معاملہ

کراچی:(08 نومبر 2018) سندھ ہائیکورٹ میں شہرمیں ہیوی ٹریفک کے داخلے پر مکمل پابندی عائد کرنے کے معاملے پر سماعت ہوئی۔ عدالت دن کے اوقات ہیوی ٹریفک کے شہر میں داخلے پر برہم ہوگئی۔ عدالت نے سیکریٹری ٹرانسپورٹ، جی ایم این ایچ اے، میئر کراچی اور دیگر کو 15 نومبر کو طلب کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں شہر میں ہیوی ٹریفک کے داخلے پر مکمل پابندی عائد کرنے کے حوالے سے کیس کی سمات ہوئی۔ دن کے اوقات میں ہیوی ٹریفک کے شہر میں داخلے پر عدالت نے برہمی کا اظہار کیا۔ جسٹس محمد علی مظہر نے ریمارکس دیے کہ بڑی بڑی بسیں اورکنٹینرز کیسے دن کے اوقات شہر میں گھومتے رہتے ہیں؟۔ ہیوی ٹریفک سے متعلق حکم پر عمل نہ ہوا تو توہین عدالت کی کارروائی کریں گے۔

ڈی آئی جی ٹریفک نے عدالت کو بتایا کہ دن کے اوقات میں شہر میں داخل ہونے والی ہیوی ٹریفک کیخلاف کارروائی ہوتی ہے۔ فوکل پرسن محکمہ ٹرانسپورٹ کا عدالت میں کہنا تھا کہ شہر سے باہر 2 ٹرمینلز بن چکے ہیں، مزید دو ٹرمینلز کی ضرورت ہے۔سندھ حکومت کے نمائندے نے عدالت میں مؤقف اپنایا کہ پابندی سے کے پی ٹی سے ملک بھرمیں کنٹینرز کی روانگی رک جاتی ہے جس سے قومی خزانے کوبھاری نقصان ہوتا ہے۔ کنٹینرز کی آمدورفت رکنے سے ملکی معیشت بھی متاثر ہوسکتی ہے۔

درخواست گزار کا کہنا تھا کہ حکومت نے اعتراف کیا ہے کہ سالانہ 230 شہری ٹریفک حادثات میں ہلاک ہوتے ہیں۔ یہ تعداد دہشتگردی سے مرنے والوں سے بھی زیادہ ہے۔ عدلت نے سیکریٹری ٹرانسپورٹ، جی ایم این ایچ اے اور میئر کراچی سے 15 نومبر کو جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔

یہ بھی پڑھیے

جعلی بینک اکاﺅنٹس کیس 12 نومبر کو سماعت کیلئے مقرر

فلیگ شپ ریفرنس : تفتیشی افسر کا بیان قلمبند کرنے کا سلسلہ جاری

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top