تازہ ترین
سلیم مانڈوی والا نے ارکان سینیٹ کو نیب کے سامنے پیش ہونے سے روک دیا

سلیم مانڈوی والا نے ارکان سینیٹ کو نیب کے سامنے پیش ہونے سے روک دیا

اسلام آباد: (19 دسمبر 2018) قائم مقام چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا نے ارکان سینیٹ کو نیب کے سامنے پیش ہونے سے روک دیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ جب تک نیب چیئرمین سینیٹ کے آفس کو آگاہ نہ کرے اور چیئرمین سینیٹ اجازت نہ دیں کوئی سینیٹر نیب کے سامنے پیش نہ ہو۔

قائم مقام چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا کی زیرصدارت ہونے والے اجلاس میں سینیٹر میر حاصل بزنجو نے نیب کی جانب سے طلبی کا معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ نیب نے مجھے نوٹس دیا اور مجھ پر زرعی اراضی، کمرشل اراضی، مارکیٹس، پلاٹس اور پلازے غیر قانونی طریقے سے بنانے کا الزام لگایا گیا ہے۔ میری اہلیہ اور خاندان کے دیگر لوگوں کو بھی شامل کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ یہ تمام الزامات بے بنیاد ہیں۔ میرا استحقاق مجروح ہوا ہے، اس کے باوجود میں خود کو احتساب کیلئے پیش کرتا ہوں اور نیب اور ایف آئی اے سمیت دیگر اداروں کی جی آئی ٹی میں پیش ہونے کو تیار ہوں۔

قائم مقام چیئرمین سلیم مانڈوی والا نے ارکان سینیٹ کو نیب کے سامنے پیش ہونے سے روکتے ہوئے کہا کہ میں چیئرمین نیب کو خط لکھ چکا ہوں کہ کسی بھی سینیٹر کو چیئرمین سینیٹ کی اجازت کے بغیرنہ بلایا جائے۔انہوں نے کہا کہ چیئرمین نیب کے جواب کا منتظر ہوں جس کی روشنی میں رولز میں مزید تبدیلی لا سکتے ہیں۔

مشاہد اللہ خان نے کہا کہ احتساب عمران خان سمیت سب کا ہونا چاہیے۔ جبکہ مولا بخش چانڈیو نے مطالبہ کیا وزرا کو ارکان پارلیمنٹ کی کردار کشی سے روکا جائے۔

یہ بھی پڑھیے

مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں: سینیٹ میں مذمتی قرارداد منظور

پاکستان،سعودی عرب کے درمیان خوشگوارتعلقات قائم ہیں، چیئرمین سینیٹ

 

Comments are closed.

Scroll To Top