تازہ ترین
سعودی صحافی کی گمشدگی:ترکی، سعودی عرب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل

سعودی صحافی کی گمشدگی:ترکی، سعودی عرب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل

ریاض:(12اکتوبر، 2018) سعودی صحافی جمال خشوگی کی گمشدگی سے متعلق تحقیقات کے لیے ترکی اور سعودی عرب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دے دی گئی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق دونوں ممالک کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم جمال خشوگی کی کمشدگی کے معاملے پر جانچ پرتال کرے گی اور حقائق سامنے لائے گی۔تحقیقاتی ٹیم سعودی عرب کی تجویز پر ترک حکام نے تشکیل دی ہے۔سعودی صحافی رواں ماہ 2 اکتوبر کو ترک شہر استنبول سے اچانک لاپتہ ہوگئے تھے، اس حوالے سے یہ بھی کہا جارہا ہے کہ جمال خشوگی کو ترکی میں سعودی قونصل خانے میں حراست میں رکھا گیا ہے۔

بعض طبقوں کی جانب سے یہ بھی کہا جارہا ہے کہ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کی پالیسیوں کو ہدف تنقید بنانے کے جرم میں سعودیہ کے معروف صحافی جمال خشوگی کو سعودی حکام نے مبینہ طور پر ترکی میں گرفتار کیا ہے۔

واضح رہے کہ ولی عہد محمد بن سلمان کی پالیسیوں پر تنقید کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع ہونے کے بعد جمال خشوگی خود ساختہ جلا وطنی ہوکر امریکا منتقل ہوگئے تھے جہاں وہ مشہور اخبار واشنگٹن پوسٹ میں صحافتی ذمہ داریاں انجام دے رہے تھے۔

دو روز قبل واشنگٹن میں سعودی عرب کے سفیر شہزادہ خالد بن سلمان نے کہا تھا کہ سعودی صحافی جمال خشوگی کے اغواء اور قتل سے متعلق رپورٹیں من گھڑت ہیں۔خیال رہے کہ ترک پولیس نے سعودی صحافی کی گمشدگی کے حوالے سے کی جانے والی ابتدائی تحقیقات میں شبہ ظاہر کیا ہے کہ جمال خشوگی مبینہ طور پر قتل ہوچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے:

بلغاریہ کی خاتون صحافی وکٹوریا مارینووا کا قاتل جرمنی سے گرفتار

بھارتی فوج کی دہشت گردی میں پی ایچ ڈی اسکالر سمیت 2 نوجوان شہید

Comments are closed.

Scroll To Top