تازہ ترین
سری لنکا کے حکومت کا مسلمانوں کے خلاف حملوں کی تحقیقات کرانے کا اعلان

سری لنکا کے حکومت کا مسلمانوں کے خلاف حملوں کی تحقیقات کرانے کا اعلان

کولمبو: (10 مارچ 2018) سری لنکا کے حکومت نے مسلمانوں کے خلاف حملوں کی تحقیقات کرانے کا اعلان کیا ہے۔ چار روز کے دوران بدھ بھکشوؤ ں نے مسلمانوں کے سیکڑوں گھر، دکانیں اور دیگر املاک جلائیں۔

غیر ملکی خبرایجنسی کے مطابق سری لنکا ميں مسلمان مخالف فسادات سری لنکا کے شہر کينڈی ميں رواں ہفتے سے شروع ہونے والے فسادات کی باقاعدہ تفتيش کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ تفتیش شروع کرنے کا اعلان سری لنکن صدر ميتھری پالا سری سينا کے دفتر سے کيا گيا۔ کينڈی ميں چار روز تک جاری رہنے والے فسادات ميں تين افراد ہلاک اور بيس زخمی ہوگئے تھے۔

پير سے جمعرات تک جاری رہنے والی پرتشدد کارروائيوں ميں مقامی مسلمانوں کے قريب دو سو مکانات اور کاروباری مراکز کو نذر آتش کرنے کے ساتھ ساتھ گيارہ مساجد کو بھی نقصان پہنچايا گيا۔ کينڈی ميں نافذ کرفيو دس مارچ کی صبح کو اٹھا ليا گيا۔ ان فسادات میں ملوث ہونے کے شبے میں ڈيڑھ سو مشتبہ افراد حراست ميں لیے جا چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

سری لنکا میں کرفیو اور ایمرجنسی کے باوجود مسلمانوں پر حملے جاری

 

کولمبو: سری لنکا میں مسلمانوں پر حملوں کا سلسلہ جاری

Comments are closed.

Scroll To Top