تازہ ترین
سانحہ ماڈل ٹاؤن: عدالتی فیصلے کے خلاف حکومتی اپیل کی سماعت 24 نومبر تک ملتوی

سانحہ ماڈل ٹاؤن: عدالتی فیصلے کے خلاف حکومتی اپیل کی سماعت 24 نومبر تک ملتوی

لاہور: (22 نومبر 2017) ہائیکورٹ نے سانحہ ماڈل ٹاؤن جوڈیشل انکوائری رپورٹ منظر عام پر لانے کے عدالتی فیصلے کے خلاف حکومتی اپیل کی سماعت 24 نومبر تک ملتوی کردی ہے۔ عدالت نے حکومت پنجاب کے وکیل خواجہ حارث کو حتمی دلائل کیلئے طلب کرلیا ہے۔

جسٹس عابد عزیز شیخ کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے درخواستوں پرسماعت کی۔ سانحہ کے متاثرین کے وکیل خواجہ احمد نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کی رپورٹ عوامی دستاویز ہے جسے  منظر عام پر لایا جائے۔ حکومت جوڈیشل انکوائری رپورٹ منظر عام پر نہ لا کر ملزمان کو تحفظ فراہم کرنا چاہتی ہے۔ سانحہ ماڈل ٹاون کے شہداء کے لواحقین کو یہی نہیں پتہ کہ ان  کے پیاروں کا قاتل کون ہے۔عدالت کو بتایا گیا کہ مسلم لیگ (ن) کی جانب سے رپورٹ اور انکوائری کمیشن کو متنازعہ بنایا جا رہا ہے۔ عدالت سے استدعا کی گئی کہ حکومتی انٹرا کورٹ اپیل توہین عدالت کی بنیاد پر ہی خارج کردی جائے۔

لاہور ہائیکورٹ نے سماعت 24 نومبر تک ملتوی کرتے ہوئے حکومت پنجاب کے وکیل خواجہ حارث کوحتمی دلائل کیلئے طلب کرلیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سانحہ ماڈل ٹاؤن کی انکوائری رپورٹ لاہور ہائیکورٹ میں پیش

ماڈل ٹاؤن رپورٹ عام کرنے کا فیصلہ انصاف کے منافی ہے، حکومتی وکیل

 

Comments are closed.

Scroll To Top