تازہ ترین
سابق وزیر اعلیٰ مقبوضہ کشمیر کا بھارت کو کرارا جواب

سابق وزیر اعلیٰ مقبوضہ کشمیر کا بھارت کو کرارا جواب

سری نگر:(15 فروری 2019) مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیراعلیٰ فاروق عبد اللہ کا کہنا ہے کہ پاکستان کو الزام نہ دیں، حملے بھارتی مظالم کے ستائے ہوئے مقامی لوگ کر رہے ہیں، جب تک بات چیت کا راستہ اختیار نہیں کیا جاتا، یہ سلسلہ جاری رہے گا۔

مقبوضہ کشمیر کے سابق کٹھ پتلی وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ نے بھارتی ٹی وی کو دئے گئے انٹرویو میں کہا ہے کہ پلوامہ میں بھارتی فوج پر خودکش حملے کا الزام پاکستان پرنہ لگایا جائے۔ ناانصافی کے خلاف مقامی لوگ بھی اٹھ کھڑے ہوئے ہیں۔ کشمیر کا تنازع بندوق یا فوج کے ذریعے حل نہیں ہوگا بلکہ بات چیت سے اس مسئلے کو حل کیا جا سکتا ہے۔مودی کو کشمیری رہنماؤں سے مذاکرات کرنے چاہئے۔

بھارتی ٹی وی کی اینکرپرسن کے پاکستان کو مورد الزام ٹہرانے اور اسلام آباد کی حمایت کے سوال پر فاروق عبداللہ انٹرویو سے اٹھ کر چلے گئےاور کہاکہ انہوں کبھی پاکستان کی حمایت نہیں کی۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز مقبوضہ کشمیر میں ضلع پلوامہ کے علاقے اوانتی پورہ میں خودکش حملے میں 42 بھارتی فوجی ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ دھماکے سے ستر گاڑیوں کے قافلے میں سے دو بسیں مکمل تباہ ہوگئیں ہیں۔ ستر گاڑیوں پر مشتمل بھارت کی فوج کا قافلہ مقبوضہ جموں سے سرینگر جارہا تھا۔

Comments are closed.

Scroll To Top