تازہ ترین
سابق وزیراعظم نوازشریف ہارلے اسٹریٹ کلینک پہنچ گئے

سابق وزیراعظم نوازشریف ہارلے اسٹریٹ کلینک پہنچ گئے

لندن :(17 جون، 2018) سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کو ہارلے اسٹریٹ کلینک طلب کر لیا گیا، ان کے صاحبزادے حسین اور مریم نواز شریف بھی ان کے ہمراہ ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف کلثوم نواز کی تیمارداری کے لئے ہارلے اسٹریٹ کلینک پہنچے،جبکہ حسین نواز اور مریم نوازبھی نواز شریف کے ہمراہ ہیں۔

اس موقع پر نواز شریف کا کہنا تھا کہ اللہ بہتر کرے گا قوم کی دعاؤں کی ضرورت ہے ،قوم کلثوم نواز کی صحت کے لئے دعا کرے،اللہ خیر کرے گا سب ٹھیک ہو گا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ بیگم کلثوم نواز کی حالت انتہائی تشویش ناک ہے اور وہ مسلسل وینٹی لیٹر پر ہیں، ان کے وینٹی لیٹر ہٹانے یا نہ ہٹانے کا فیصلہ کل کیا جائے گا۔

اس سے قبل سابق وزیرِاعلیٰ پنجاب شہباز شریف لندن کے ہارلے اسٹریٹ ہسپتال میں بیگم کلثوم نواز کی عیادت کیلئے پہنچے اور میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ کلثوم نواز بدستور وینٹی لیٹر پر ہیں، ڈاکٹرز پیر کے روز ان کا دوبارہ معائنہ کریں گے اور وینٹی لیٹر ہٹانے یا نہ ہٹانے کے حوالے سے فیصلہ کریں گے۔

صدر پاکستان مسلم لیگ (ن) کا کہنا تھا میرے دورے کا مقصد صرف بیگم کلثوم نواز کی عیادت ہے، اللہ تعالیٰ سے دعا ہے کہ انھیں جلد از جلد صحت عطا فرمائے۔ اس دوران شہباز شریف کے صاحبزادے سلمان شہباز بھی اپنی والدہ کے ہمراہ ہسپتال پہنچے اور بیگم کلثوم کی عیادت کی۔دوسری جانب مسلم لیگ (ن) کی مرکزی رہنما مریم نواز نے قوم سے دعاﺅں کی اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ اب دعا ہی میری والدہ کوبچا سکتی ہے،میں نے ان کو ابھی تک ہوش میں نہیں دیکھا۔

ہارلے اسٹریٹ کلینک سے روانگی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا ہے کہ میں نے اپنی والد ہ کوابھی ہوش میں نہیں دیکھا، جب ہم اسپتال پہنچے تووہ وینٹی لیٹر پر تھیں۔ میں اپنی والدہ سے بات کرنا چاہتی ہوں اور ان کی آواز سننا چاہتی ہوں۔انہوں نے کہا کہ ہم کرب سے دوچار ہیں اورڈاکٹر ہمیں والدہ کی صحت کے بارے میں کچھ نہیں بتا رہے ۔ مریم نواز نے قوم سے دعا ﺅں کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ اب دعا ہی میری والدہ کو بچا سکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اللہ تعالی میر ی والدہ کوصحت عطا فرمائیں۔

یہ بھی پڑھیے

لندن: بیگم کلثوم نواز کے کمرے میں مشتبہ شخص کے داخلے کی کوشش ناکام

عام انتخابات میں حصہ لینے کے خواہش مند 122 امیدوار دہری شہریت کے حامل

 

Comments are closed.

Scroll To Top