تازہ ترین
روہنگیا میں مسلمانوں کی نسل کشی ہوئی ہے، جرائم کی تحقیقات کا مطالبہ، یو این

روہنگیا میں مسلمانوں کی نسل کشی ہوئی ہے، جرائم کی تحقیقات کا مطالبہ، یو این

نیویارک: (12 مارچ 2018) اقوام متحدہ کی عہدیدار نے میانمار میں مسلمانوں کے خلاف تشدد کو روہنگیا کی نسل کشی قرار دیتے ہوئے جرائم کی تحقیقات کا مطالبہ کیاہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے ایک رپورٹ میں کہاہے کہ صوبہ راکھین میں مسلمانوں کے جلائے گھروں کی جگہ پر فوجی اڈے بنائے جارہے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق میانمار میں مسلمانوں کے خلاف مظالم کی تحقیقات کرنیوالی اقوام متحدہ کی عہدیدار کا کہنا تھاکہ مسلمانوں پر مظالم کا جائزہ لینے سے معلوم ہواکہ راکھائن اور دیگر روبوں میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی ہوئی۔سوچی سمجھی سازش کے تحت مسلمانوں کا قتل عام کیا گیاخواتین اوربچوں سے زیادتی کی لاکھوں ڈالر کی املاک جلائی گئیں۔

یانکہی نے کہاکہ میانمار میں پچیس اگست دو ہزار سولہ سے مسلمانوں کی نسل کشی جاری ہے۔ یہ جنگی جرائم کے زمرے میں آتا ہے۔ یانکہی نے کہاکہ ایک کمیٹی قائم کی جائے جو بنگلادیش میں رہنے والی روہنگیا مسلمان خواتین کی داستان سنے۔

یہ بھی پڑھیے

روہنگیا میں مسلمانوں کی نسل کشی ہوئی ہے، جرائم کی تحقیقات کا مطالبہ، یو این

روہنگیا مسلمانوں کے قتل عام کا ذمےدار میانمار کی فوج کو ٹھرایاجائے،امریکی سفیر

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top