تازہ ترین
روہنگیا مسلمانوں کے قتل عام پر سوشل میڈیا صارفین میں شدید غم و غصہ

روہنگیا مسلمانوں کے قتل عام پر سوشل میڈیا صارفین میں شدید غم و غصہ

ویب ڈیسک (4 ستمبر 2017) برما میں روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ ہونے والے شیطانی کھیل پر سوشل میڈیا پر بھی کڑی تنقید کی جارہی ہے۔ آنگ سانگ سوچی سے نوبل انعام واپس لینے اور ان کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں مقدمہ چلانے کا مطالبہ بھی زور پکڑ گیا۔

روہنگیا مسلمانوں کے ساتھ ہونے والے ظلم و ستم پر دنیا بھر کے سوشل میڈیا صارفین میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے۔ ہر کوئی ان دکھی اور مظلوم مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کر رہا ہے۔

روہنگیا مسلم کا ہیش ٹیگ ٹوئٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گیا۔ آنگ سانگ سوچی کو ظالم اور جابر جیسے خطابات سے نوازا جارہا ہے۔ بیشتر صارفین کا ماننا ہے کہ آنگ سانگ سوچی نے مسلمانوں کے خون سے ایسی درد ناک داستان تحریر کی ہے کہ ان کے پاس نوبل انعام رکھنے کا اب کوئی جواز نہیں بنتا۔

کئی نے آنگ سانگ سوچی کو خواتین کی ہٹلر قرار دیا ہے۔ جبکہ سوشل میڈیا پر بربریت اور ظلم کی چکی میں پستے ہوئے روہنگیا مسلمانوں سے اظہار یکجتی بھی کیا جارہا ہے۔

جبکہ آنگ سانگ سوچی کے خلاف عالمی عدالت انصاف میں مقدمہ دائر کرنے کے لئے بھی سوشل میڈیا پلیٹ فارم پر پٹیشن دائر کی جارہی ہیں جن پر اب تک 27 ہزار سے زیادہ لوگ دستخط کرچکے ہیں۔ مقدمہ کے لئے دائر درخواست پر اس لنک کے ذریعہ دستخط کئے جاسکتے ہیں۔

https://goo.gl/vbabbh

یہ بھی پڑھیئے

روہنگیا مسلمانوں پر ظلم کے خلاف قومی اسمبلی میں تحریک التوا جمع

روہنگیا مسلمانوں کے قتل عام پر ملالہ یوسف زئی کا اظہار تشویش

Comments are closed.

Scroll To Top