تازہ ترین
رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں 81 ارب سے زائد سرمایہ کاری

رواں مالی سال کی پہلی ششماہی میں 81 ارب سے زائد سرمایہ کاری

اسلام آباد: (11 فروری 2018) غیر ملکی سرمایہ کاروں کی سی پیک میں دلچسپی بڑھنےلگی۔ رواں مالی سال کے پہلے چھ ماہ میں بیرونی سرمایہ کاروں نےاکیاسی ارب چون کروڑ روپے کی سرمایہ کاری کی۔ غیر ملکی سرمایہ کاری سے شاہراہوں کی تعمیر اور توانائی کے منصوبوں کی تکمیل میں مدد ملے گی۔

اقتصادی امور ڈویژن کے ذرائع کے مطابق رواں مالی سال کے چھ ماہ کے دوران بیرونی ذرائع سے پاکستان میں ترقیاتی منصوبوں کے لئے اکیاسی ارب چون کروڑ روپے کے فنڈزموصول ہوئے ہیں۔ اس دوران سڑکوں، پلوں اور موٹرویز کی تعمیر کے لئے نیشنل ہائی وے اتھارٹی کو ترپین ارب چون کروڑ انہتر لاکھ روپے۔ بجلی کے منصوبوں کے لئے واپڈا کو تئیس ارب چودہ کروڑ روپے اور پاکستان ایٹمی توانائی کمیشن کو ایک ارب ستانوے کروڑ روپے کے بیرونی فنڈز ملے ہیں۔

ذرائع کہنا ہے کہ سول ایوی ایشن ڈویژن کو اکانوے کروڑ روپے۔ انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈیویژن کو پچھہتر کروڑ روپے اور آزاد کشمیر حکومت کو اکاون کروڑ روپے کے فنڈز موصول ہوئے ہیں۔

اس دوران قومی صحت کے منصوبوں کو تئیس کروڑ روپے، گلگت بلتستان حکومت کو سترہ کروڑ روپے، سیفران اور فاٹا کو تیرہ کروڑ روپے، خزانہ ڈویژن تین کروڑ روپے، ریونیو ڈیویژن ایک کروڑ روپے کے فنڈز غیرملکی ذرائع سے موصول ہوئے ہیں۔ رواں مالی سال کے بجٹ میں غیرملکی ذرائع سے ایک سو باسٹھ ارب روپے ملنے کا تخمینہ لگایا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

سی پیک سے پاکستان اورچین کے دوستانہ تعلقات مزید مضبوط ہوں گے، مریم اورنگزیب

 

سی پیک کے تحت شراکت داری میں خدمات فراہم کرنے چینی لا فرم کا وفد پاکستان پہنچ گیا

Comments are closed.

Scroll To Top