تازہ ترین
حکومت نے فنانس ایکٹ 2018 کے انکم ٹیکس آرڈیننس میں ترامیم کردیں

حکومت نے فنانس ایکٹ 2018 کے انکم ٹیکس آرڈیننس میں ترامیم کردیں

اسلام آباد: (13 ستمبر 2018) حکومت نے فنانس ایکٹ 2018ء کے انکم ٹیکس آرڈیننس میں بعض چند ترامیم کردیں ہیں جس کے مطابق تنخواہ دارطبقے کیلئے دی گئی رعایت کم کردی گئی ہے۔

حکومت کی جانب سے کی جانے والی ترامیم کا اثر تنخواہ دار طبقے پر پڑے گا۔ ترامیم سے تنخواہ دارطبقے کیلئے دی گئی رعایت کم کردی گئی ہیں۔ حکومتی ترامیم کے مطابق چار لاکھ روپے تک سالانہ آمدن پر کوئی ٹیکس نہیں ہوگا۔

چار لاکھ سے 8 لاکھ روپے سالانہ آمدن پر ایک ہزار روپے ٹیکس ہوگا۔ جبکہ 8 سے 12 لاکھ روپے سالانہ آمدن پر 2 ہزار روپے ٹیکس ہوگا۔اسی طرح 12 لاکھ روپے سے 24 لاکھ روپے تک سالانہ آمدن پر 5 فیصد انکم ٹیکس ہوگا۔ 24 لاکھ سے زیادہ اور 48 لاکھ روپے سے کم رقم پر 10 فیصد اضافی ٹیکس دینا ہوگا۔اسی طرح ایسے افراد جن کی آمدن 48 لاکھ روپے سے زیادہ ہے انہیں سالانہ آمدن پر 3 لاکھ فکسڈ ٹیکس اور اضافی 15 فیصد دینا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیے

وفاقی حکومت کا وزیراعظم ہاﺅس کو اعلیٰ درجے کا تعلیمی ادارہ بنانے کا فیصلہ

محرم الحرام ہمیں ایثار وقربانی کا درس دیتا ہے، صدر مملکت،وزیراعظم

 

Comments are closed.

Scroll To Top