تازہ ترین
جاپانی وزیر اعظم کی جانب سے ملکی آئین تبدیل کرنے کا عندیہ

جاپانی وزیر اعظم کی جانب سے ملکی آئین تبدیل کرنے کا عندیہ

ٹوکیو:(14 ستمبر 2018) جاپانی وزیر اعظم شنزو آبے نے دوبارہ اقتدار سنبھالنے کے بعد جنگ کے بعد بنائے گئے ملکی آئین کو تبدیل کرنے کا عندیہ دے دیا۔

واضح رہے کہ شنزو آبے کو وزیر اعظم کے لیے امیدوار نامزد ہونے کے لیے لبرل ڈیموکریٹک پارٹی ( ایل ڈی پی) کے اراکین پارلیمنٹ سے 70 فیصد ووٹ حاصل ہوگئے ہیں اور یہ خیال کیا جارہا ہے کہ دوبارہ انتخابات سے انہیں 3 سال کا مزید وقت مل جائے گا۔

امریکی خبر رساں ادارے اے پی کی رپورٹ کے مطابق جاپان میں 20 ستمبر کو ہونے والے انتخابات سے قبل انہوں نے پہلی مرتبہ عوامی سطح پر سابق وزیر دفاع سے مسائل پر بحث کی تھی۔جاپان کے سرکاری نشریاتی ادارے پر دکھائے جانے والی اس تقریب میں ان کا کہنا تھا کہ ’میں اپنے ملکی آئین پر نظر ثانی کروں گا جسے جنگ کے بعد کیا جانا تھا تاہم یہ کام آج تک نہیں ہوسکا’۔

واضح رہے کہ 63 سالہ شنزو آبے دسمبر 2012 میں جاپان کے وزیر اعظم بنے تھے۔

انہیں لبرل ڈیموکریٹس کے 5 گروہوں سمیت دیگر مقامی پارٹی ممبران کی حمایت حاصل ہے۔

آبے کا کہنا تھا کہ انہیں امید ہے کہ ان کی جماعت رواں سال کے آخر میں پارلیمانی سیشن کے دوران ڈرافٹ جمع کرادے گی۔

یہ بھی پڑھیے

معاشی دباؤ نے چین کو امریکا سے تجارت کیلئے مجبور کر دیا، ڈونلڈ ٹرمپ

پاک افغان تعلقات میں چیلنجز ہیں، افغان چیف ایگزیکٹو عبداللہ

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top