تازہ ترین
جانباز پائلٹ آفیسر راشد منہاس کا68واں یوم پیدائش آج منایا جارہا ہے

جانباز پائلٹ آفیسر راشد منہاس کا68واں یوم پیدائش آج منایا جارہا ہے

کراچی:(17 فروری 2019) ملک کی خدمت کا جذبہ رکھنے والے بہادر سپاہی راشد منہاس کا 68 واں یوم پیدائش منایا جارہا ہے، قومی ہیرو نے کم عمری میں ناصرف جنگ میں شامل ہوکر بہادر کا مظاہرہ کیا بلکہ 1971 میں اپنی جان کا نذرانہ پیش کرکے اپنی کو ملک کے محافظ ہونے کا ثبوت بھی دیا۔

راشد منہاس نے 17 فروری 1951 کو کراچی میں آنکھ کھولی۔  ہوا کے دوش پر سفر کرنے کا جذبہ بچپن سے ہی تھا۔ اسی شوق کو پورا کرنے کے لیے پاک فضائیہ میں شمولیت اختیار کی۔ وطن کی مٹی سے محبت کا جذبہ اقبال کے اس شاہین میں کوٹ کوٹ کر بھرا تھا۔ کم عمری میں پائلٹ بنے تو ملک کے لیے کچھ کرگزرنے کی امنگ جاگ اٹھی۔

بیس اگست1971 کی صبح جب راشد منہاس اپنی دوسری سولو فلائٹ کے لیے اڑان بھررہے تھے تو غدار انسٹرکٹر مطیع الرحمان نے سازش رچائی اور چالاکی سے جہاز میں سوار ہو کرانہیں کلوفارم سونگھاکر بے ہوش کردیا اور جہاز کا رخ بھارت کی طرف موڑ دیا۔ ابھی جہاز ٹھٹھہ کی حدود ہی میں تھا کہ راشد منہاس کو ہوش آگیا اور انہوں نے مطیع الرحمان کے ناپاک ارادوں کو خاک میں ملانے کی ٹھانی۔

نوجوان پائلٹ فضا میں غدار کے سامنے ڈٹ گیا اور اسے شکست دینے کا ارادہ کرلیا۔ وہ نہیں چاہتا تھا کہ جہاز اور مطیع الرحمان جس کے پاس ملک کے ہزاروں راز تھے وہ دشمن تک پہنچ جائیں۔ اسی جدوجہد میں اس نے زندگی کا بڑا فیصلہ کرلیا۔ غدار مطیع الرحمان سمیت جہاز کو زمین پے جا گرایا۔

اور یوں جان کا نذرانہ دے کر ملک پر آنچ نہ لانے والے راشد منہاس کو 29 اگست کوپاکستان میں جرات اور شجاعت کو سب سے بڑا اعزاز نشان حیدر سے نوازا گیا۔ راشد منہاس یہ اعزاز پانے والے چوتھے اور اب تک سب سے کم عمر پاکستانی جانباز ہیں۔

Comments are closed.

Scroll To Top