تازہ ترین
جائیداد ضبطگی کیس میں اسحاق ڈار کی درخواست مسترد

جائیداد ضبطگی کیس میں اسحاق ڈار کی درخواست مسترد

اسلام آباد: (14 فروری 2018) احتساب عدالت نے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی جائیداد ضبطگی کے خلاف دائر درخواست مسترد کردی ہے۔

تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے سات فروری کو محفوظ کیا گیا فیصلہ سنایا، فیصلے میں احتساب عدالت نے اسحاق ڈار کے تمام اعتراضات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ جائیداد ضبطگی کا فیصلہ یہ تھا کہ جائیداد فروخت نہ کی جائے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

جج محمد بشیر کا مزید کہنا تھا کہ عدالت کا وہ فیصلہ برقرار رہے گا، جائیداد فروخت نہیں کی جا سکتی،جج محمد بشیر نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ نیب نے جائیداد پر قبضہ نہیں کیا اثانے منجمد ہی رہیں گے۔اس سے قبل سات فروری کو ہونے والے سماعت میں اسلام آباد کی احتساب عدالت نے اسحاق ڈار کی جانب سے جائیداد ضبطگی پر اعتراضات کے کیس پر فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

قاضی مصباح نے عدالت میں موقف اپنایا کہ ہجویری فانڈیشن ایک ادارہ ہے جس میں خرید و فروخت نہیں کر سکتے ۔جو فیصلہ ہوتا ہے بورڈ کرتا ہے پھر اس پر عمل درآمد ہوتا ہے۔

نیب پراسیکیوٹر نے دلائل دیتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ جائیداد ضبطگی کے چودہ دن کے اندر رجوع کرنا چاہیے تھا جو انہوں نے نہیں کیا۔جس پر قاضی مصباح کا کہنا تھا کہ ہمیں آرڈر دیر سے ملا ورنہ ہم فورا رجوع کرتے، عدالت نے دونوں جانب سے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔فیصلہ 14 فروری کو سنایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیے

اسحاق ڈار کی جانب سے جائیداد ضبطگی پر اعتراضات کیس پر فیصلہ محفوظ

اسحاق ڈار کے کاغذات نامزدگی مسترد

 

Comments are closed.

Scroll To Top