تازہ ترین
ترک صدر نے کردوں کے خلاف کارروائی روکنے کی  امریکی درخواست مسترد کردی

ترک صدر نے کردوں کے خلاف کارروائی روکنے کی  امریکی درخواست مسترد کردی

انقرہ ( 09جنوری ،2019) ترک صدر نے شام میں کردوں کے خلاف کارروائی روکنے سے متعلق کیلئے امریکی درخواست مسترد کردی ہےاور کہاہے کہ امریکا ترکی میں تمام بیس خالی کرے یا اسے تباہ کردے،رجب طیب اردوان نے ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر قومی سلامتی جان بولٹن سے ملنے سے انکار کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مشیر قومی سلامتی جان بولٹن ترکی کے دورے پر تھے۔انہوں نے شام سے امریکی فوج کے دو ہزاروں نوجوانوں کے انخلا ءکے اعلان سے متعلق تبالہ خیال کیااور درخواست کی کہ ترکی شام میں وائی پی جی اور دیگر کرد گروپوں کے خلاف کارروائی نہ کرے۔

بولٹن نے ترک صدر سے ملاقات کی خواہش ظاہر کی لیکن رجب طیب اردوان نے ملنے سے انکار کردیا اور کہاکہ بولٹن صدارتی ترجمان ابراہیم کیلن سے مل چکے ہیںاور وہ ان سے ملاقات نہیں کریں گے۔

ترک صدر کے ترجمان نے کہاکہ رجب طیب اردوان نے کہاہےکہ امریکا ترکی میں تمام فوجی اڈے بند کردے۔اسے خود تباہ کرےاور ناکارہ بنادے۔

یہ بھی پڑھیے:

یورپ میں شدید برف باری سے سات افراد جاں بحق

امریکی صدر کا شام سے امریکی فوجیوں کے انخلا کا فیصلہ دانشمندانہ ہے، طیب اردگان

Comments are closed.

Scroll To Top