تازہ ترین
بیرون ملک پاکستانی قومی اثاثہ ہیں، وزیراعظم عمران خان

بیرون ملک پاکستانی قومی اثاثہ ہیں، وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد:(12اکتوبر، 2018)وزیراعظم عمران خان نے اوورسیز پاکستانیوں کے مسائل حل کرنے کے لئے روڈ میپ تیارکرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی قومی اثاثہ ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اظہار خیال کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ سمندر پار پاکستانیوں سے تفصیلی ملاقات ہوئی، ہم سمندر پار پاکستانیوں کے لیے خصوصی مراعات کے پیکج کا اعلان کر رہے ہیں اور بینکوں کے ذریعہ رقم بھیجنے کے لئے ان کی حوصلہ افزائی کے لئے خصوصی پیکج متعارف کریں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ اوورسیزپاکستانیوں کی ترسیلات زر بینکوں سے بھیجنے کی حوصلہ افزائی کی جائے گی اور انتظامی معاملات میں رکاوٹوں کو دور کریں گے تاکہ ترسیلاتِ زر میں اضافہ ہو، اس طرح کے اقدام سے ترسیلاتِ زر میں 20 ارب سے 40 ارب ڈالر تک اضافہ ہوسکتا ہے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ فلپائن کی مثال ہمارے سامنے ہے، وہاں اسی طریقے سے معیشت بہتر بنائی گئی، فلپائن نے اس اقدام کو کامیابی سے سرانجام دیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جائیدادوں کا لینڈ مافیا سے تحفظ یقینی بنائیں گے۔

https://twitter.com/ImranKhanPTI/status/1050684154076119041

دو روز قبل اسلام آباد میں ”نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی“ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیرِاعظم عمران خان نے کہا کہ سالانہ 10 ارب ڈالرز کی منی لانڈرنگ ہو رہی ہے۔ اگر ملک میں منی لانڈرنگ کو روکا جاتا تو قرضوں کے پیچھے نہ جانا پڑتا۔ ہمیں قرضوں کی قسطیں واپس کرنے کیلئے پیسہ چاہیے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہم اپنے اداروں کو ٹھیک کر رہے ہیں، اصلاحات کے اثرات چھ ماہ بعد آئیں گے۔ اٹھارہ ارب ڈالرز کا خسارہ پچھلی حکومت سے تحفہ ملا۔ یہ پاکستان کی تاریخ کا بڑا خسارہ ہے۔انہوں نے کہا کہ مملکت کا نظام چلانے کیلئے ہمارے پاس دو راستے تھے، ایک راستہ دوست ممالک کی مدد اور دوسرا آئی ایم ایف ہے۔ تاہم لوگ ایسے بتا رہے ہیں جیسے کوئی قیامت آ گئی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ پاکستان کو اللہ نے بے شمار وسائل سے نوازا لیکن بد قسمتی سے ملک میں گڈ گورننس نہیں تھی۔ حوصلہ رکھیں، تھوڑی دیر مشکل دور سے گزرنا پڑے گا، وقت زیادہ دور نہیں اچھا وقت آئے گا۔انہوں نے ”نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی“ کے قیام کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہاؤسنگ اتھارٹی ون ونڈو آپریشن دے گی اور اسے میں مانیٹر کروں گا جبکہ ہاؤسنگ اسکیم میں پرائیویٹ پبلک پارٹنرشپ بھی کریں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں بے روزگاری بہت بڑا مسئلہ ہے، عام آدمی کبھی گھر بنانے کا سوچ بھی نہیں سکتا۔ اس ہاؤسنگ سکیم منصوبے کی وجہ سے نوجوانوں کو روزگار ملے گا۔عمران خان نے مزید کہا کہ ہاؤسنگ اسکیم ملک میں خوشحالی لے کر آئے گی۔ اس منصوبے کے ساتھ 40 صنعتوں کا تعلق ہے جو چلیں گی۔ پچاس لاکھ گھر ہمارا ٹارگٹ ہیں جو پانچ سالوں کے اندر بنائے جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیے

ہم کوئی ایساوعدہ نہیں کریں گے جس پر بعد میں معذرت کرناپڑے، وزیراعظم عمران خان

عمران خان کا سدرن کمانڈ ہیڈکوارٹر کوئٹہ کا دورہ

 

Comments are closed.

Scroll To Top