تازہ ترین
بھارت سے مذاکرات کا آغاز بہت ضروری ہے، ترجمان دفتر خارجہ

بھارت سے مذاکرات کا آغاز بہت ضروری ہے، ترجمان دفتر خارجہ

اسلام آباد: (06 دسمرب 2018) ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ بھارت سے مذاکرات کا آغاز بہت ضروری ہے لیکن بھارتی انتخابات ان کی پالیسی پر اثر انداز ہورہے ہیں۔ کشمیر پاکستان کا سرفہرست ایجنڈا رہے گا۔

دفتر خارجہ میں ہفتہ وار بریفنگ کے دوران ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا کہ امریکہ سے بات چیت کا آغاز اچھی شروعات ہے۔ امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد کا دورہ پاکستان افغان مفاہمتی عمل میں پیشرفت سے متعلق تھا۔

انہوں نے کہا کہ کولیشن سپورٹ فنڈ پر امریکہ سے بات چیت جاری ہے۔ افغان مسئلے کا حل بات چیت سے حل کیلئے تمام فریقین متفق ہیں۔ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان کرتارپور بارڈر بابا گرونانک کے آئندہ جنم دن سے قبل کھولنے کا خواہشمند ہے۔ یقین دلاتے ہیں کہ ممبی حملہ کیس کے حوالے سے انصاف ہوگا۔ کرتار پور سے مسئلہ کشمیر قطعی طور پر نظر انداز نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر پاکستان کا سرفہرست ایجنڈا رہے گا۔ کوئی کشمیر کا معاملہ دب جانے کی غلط فہمی میں نہ رہے۔ترجمان دفتر خارجہ نے مزید کہا بھارت کے برخلاف پاکستان مسئلہ کشمیر پر بات چیت کیلئے تیار ہے۔ مذاکرات کا آغاز بہت ضروری ہے لیکن بھارت کی پالیسی پر ان کے انتخابات اثر انداز ہورہے ہیں۔ امریکی صدر کا خط اچھی ابتدا ہے تاہم امریکہ سے بات چیت جب بھی ہوگی غیر مشروط ہوگی۔

یہ بھی پڑھیے

کشمیری اپنے خون سے تاریخ لکھ رہے ہیں، ترجمان دفتر خارجہ

سارک کانفرنس میں بھارتی وزیراعظم کو پاکستان مدعو کیا جائے گا، دفتر خارجہ

 

Comments are closed.

Scroll To Top