تازہ ترین
بارہ اکتوبر 1999 کے مارشل لا کو 19 سال بیت گئے

بارہ اکتوبر 1999 کے مارشل لا کو 19 سال بیت گئے

ویب ڈیسک:(12 اکتوبر 2018) جنرل پرویزمشرف کی جانب سے12 اکتوبر 1999 کو لگائے گئے مارشل لا کوآج انیس سال بیت گئے ہیں ۔ پرویزمشرف نے بارہ اکتوبرانیس سونناوے کواس وقت کے وزیراعظم نواز شریف کومعزول کرکے اقتدارپرقبضہ کرلیاتھا۔مشرف کے خلاف سابق حکومت کی جانب دائر کیاگیا غداری کا مقدمہ بھی خصوصی عدالت میں زیر سماعت ہے۔بارہ اکتوبر 1999 کو اس وقت کے وزیراعظم نواز شریف نے لیفٹیننٹ جنرل ضیاء الدین بٹ کو جنرل کے عہدے پر ترقی دے کر نیا آرمی چیف بنایا لیکن جبری ریٹائر کیے گئے آرمی چیف جنرل پرویز مشرف نے وزیراعظم کا فیصلہ قبول نہ کیا۔ جس کے بعد ٹرپل ون بریگیڈ نے وزیراعظم سیکریٹریٹ پر قبضہ کرلیا اور جمہوری وزیراعظم کو ہتھکڑی لگا کر معزول کر دیا۔

نواز شریف کو اقتدار سے ہٹانے کے بعد پرویز مشرف نے حکومت سنبھال لی جس کے بعد انہوں نے ‘سب سے پہلے پاکستان’ کا نعرہ لگا کر امریکی اتحادی بننے کا فیصلہ کیا جس کے بعد پاکستانی معیشت کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ملک کے صدر اور پاک فوج کی کمان سنبھالے پرویز مشرف نے 9 مارچ 2007 کو چیف جسٹس پاکستان افتخار محمد چوہدری کو غیر فعال کیا تو وکلاء تحریک ‘گو مشرف گو’ ملک گیر عوامی تحریک بن گئی۔

این آر او اور 3 نومبر 2007 کی ایمرجنسی بھی پرویز مشرف کو نہ بچا سکی اور وردی کو کھال قرار دینے والے پرویز مشرف کو 28 نومبر 2007 کو فوجی کمان جنرل کیانی کے حوالے کرنا پڑی۔ستائیس دسمبر 2007 کو بے نظیر بھٹو کی المناک شہادت کے بعد 18 فروری 2008 کے عام انتخابات میں عوام نے پرویز مشرف اور ان کے ساتھیوں کا حساب چکتا کردیا۔

مواخذے کے خوف سے 18 اگست 2008 کو پرویز مشرف کو استعفا دینا پڑا اور یوں ملک میں ایک اور طویل دور آمریت اپنے خاتمے کو پہنچا۔

یہ بھی پڑھیے

پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کی روزانہ سماعت کا فیصلہ

پرویز مشرف کے خلاف سنگین غداری کیس کی سماعت آج ہوگی

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top