تازہ ترین
انصار الشریعہ بنانے والوں کا تعلق القاعدہ سے ہے، ڈی جی رینجرز

انصار الشریعہ بنانے والوں کا تعلق القاعدہ سے ہے، ڈی جی رینجرز

کراچی (9 ستمبر 2017) خواجہ اظہار پر حملے اور پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ میں ملوث تنظیم انصار الشریعہ کے آپریشن میں پیشرفت ہوئی ہے۔ تنظیم بنانے والوں کا تعلق القاعدہ سے ہے۔ ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل محمد سعید کہتے ہیں آپریشن مکمل ہونے کے بعد مکمل تفصیل بتائی جائے گی۔

دہشتگرد تنظیم انصارالشریعہ کےخلاف آپریشن میں پیش رفت ہوئی ہے۔ ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل محمد سعید نے بھی آپریشن کی توثیق کردی۔ کہتے ہیں آپریشن جاری ہے، ملنے والی معلومات کو شیئر نہیں کیا جاسکتا۔ آپریشن مکمل ہونے کے بعد پریس کانفرنس میں تفصیل بتائی جائے گی۔

انصارالشریعہ تنظیم کا نشانہ پولیس تھی۔ تنظیم بنانے والے کا تعلق القاعدہ سے ہے جو کراچی تک محدود ہے۔ تنظیم کے ٹارگٹ کلرز نے قتل و غارت بھی رواں سال شروع کی۔ پولیس اور سیکیورٹی فورسز کے علاوہ 2 سیکیورٹی گارڈز اور رضاکاروں کو بھی قتل کیا۔

ڈی جی رینجرز کے مطابق انصارالشریعہ میں شامل ماسٹرز، پی ایچ ڈی اور سی اے کے لڑکوں کا مختلف یونیورسٹیوں سے تعلق ہے۔ جامعہ کراچی میں طلبہ کے ریکارڈ سے متعلق ابھی کچھ بات چیت نہیں ہوئی۔ انصارالشریعہ کے ایک دہشتگرد کو ہلاک اور ایک کو گرفتار کیا گیا ہے۔ بلوچستان سے گرفتار افراد کو بھی شامل تفتیش کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیئے

کراچی: انصارالشریعہ کے گرفتار سرغنہ عبداللہ کے چشم کشا انکشافات

قانون نافذ کرنیوالے ادارے کی کراچی میں کارروائی، انصارالشریعہ کا کارندہ گرفتار

Comments are closed.

Scroll To Top