تازہ ترین
امریکا 2015کا ایٹمی معاہدہ تسلیم کرلے تو مذاکرات کے لئے تیار ہیں، ایران

امریکا 2015کا ایٹمی معاہدہ تسلیم کرلے تو مذاکرات کے لئے تیار ہیں، ایران

تہران : ( 21 اگست 2018) ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے امریکا کو مشروط مذاکرات کی پیشکش کی ہے۔ ان کا کہناہے کہ اقتصادی پابندیوں سے تہران کو سیاسی نہیں معاشی نقصان ضرور ہواہے۔ ایران امریکی صدر سے مذاکرات کے لئے تیارہے بشرطیکہ ڈونلڈ ٹرمپ دوہزار پندرہ کے ایٹمی معاہدے کو تسلیم کریں۔

تہران میں امریکی ٹی وی کو دیئے گئے انٹرویو میں ایرانی وزیر خارجہ نے کہاکہ ایران امریکی صدر سے مذاکرات کے لئے تیار ہے۔ بشرطیکہ ڈونلڈ ٹرمپ دوہزار پندرہ کے ایٹمی معاہدے کو تسلیم کریں اور اپنا ایگزیکٹو آرڈر واپس لیں۔جواد طریف کا کہنا تھا امریکی پابندیوں سے ایران کے بیمار شہریوں کیلئے ادویات اور دیگر مشنیری کا بندو بست کرنے میں مشکلات پیش آرہی ہیں۔ امریکی پابندیوں سے سیاسی نہیں صرف معاشی نقصان ہوا ہے۔ سیاسی طورپر تہران کا موقف مضبوط ہے۔

یہ بھی پڑھیے

امریکہ نے ایران پر سخت پابندیاں عائد کرنے کا عندیہ دے دیا

امریکہ نے ایران کو شام سے افواج واپس بلانے سمیت12مطالبات پیش کردئے

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top