تازہ ترین
الیکشن کمیشن نے عمران خان کو ایک بار پھر نوٹس جاری کردیا

الیکشن کمیشن نے عمران خان کو ایک بار پھر نوٹس جاری کردیا

اسلام آباد: (08 اگست 2018) الیکشن کمیشن نے ووٹ کی رازداری پامال کرنے پر عمران خان کو ایک بار پھر نوٹس جاری کردیا ہے۔ عمران خان کو کل خود یا بذریعہ وکیل پیش ہونے کی ہدایت کردی ہے۔

وزارت میں آنے سے قبل ہی عمران خان کی ایک اور معاملے پر پکڑ ہوگئی۔ عام انتخابات میں  ووٹ کی رازداری پامال کرنے پر الیکشن کمیشن نے این اے 53 سے عمران خان کی کامیابی کا نوٹس روک رکھا ہے۔

الیکشن کمیشن نے چئیرمین پی ٹی آئی کو ایک بار پھر نوٹس جاری کردیا۔ ساتھ ہی عمران خان کو کل خود یابذریعہ وکیل پیش ہونے کی ہدایت کی ہے۔الیکشن کمیشن نے معاملہ کل سماعت کیلئے مقرر کردیا ہے۔ عمران خان کے وکیل بابر اعوان نے آج جلد کیس سننے کی استدعا کی تھی۔

واضح رہے کہ نیب خیبرپختونخواہ نے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کو ہیلی کاپٹر اسکینڈل کیس میں 7 اگست کو طلب کر رکھا ہے۔ اس سے قبل کیس میں سابق وزیراعلی پرویزخٹک اور سول ایوی ایشن حکام اپنے بیانات قلمبند کراچکے ہیں۔

ذرائع کے مطابق عمران خان نے صوبائی حکومت کے دو ہیلی کاپٹروں ایم آئی 171 اور ایکیوریل پر تقریباً 74 گھنٹے اڑان بھری۔ عمران خان نے ایم آئی 171 ہیلی کاپٹر پر 22 گھنٹے سفر کیا ، جس پر 12 لاکھ 70 ہزار 306 روپے اخراجات آئے۔

عمران خان نے دوسرے ہیلی کاپٹر ایکیوریل پر 52 گھنٹے سفر کیا جس پر 8 لاکھ 36 ہزار 875 روپے اخراجات آئے۔ عمران خان کے سرکاری ہیلی کاپٹرز استعمال پر 74 گھنٹے سفر کیا جس پر 21 لاکھ 7 ہزار181 روپے کے اخراجات آئے۔

ویڈیودیکھنے کیلئے پلے کابٹن دبائیں

اس سے قبل نیب خیبر پختونخوا نے سرکاری ہیلی کاپٹر کیس میں چیئرمین پاکستان تحریک انصاف کو 18 جولائی کو طلب کیا تھا۔

نیب کی تفتیشی ٹیم کی جانب سے جاری کیا گیا نوٹس بنی گالہ کے ملازمین نے وصول کیا۔ نوٹس میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کو ذاتی طور پر بیان ریکارڈ کرانے کیلئے نیب پشاور طلب کیا گیا ہے۔

ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

قومی احتساب بیورو ذرائع کے مطابق نیب کے پی کے نے سرکاری ہیلی کاپٹر غیر قانونی استعمال کرنے کے کیس میں عمران خان کے خلاف تمام مواد جمع کر لیا ہے۔

اس سے قبل نیب خیبر پختونخوا کی ٹیم کی درخواست پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے عمران خان کی طلبی کی اجازت دی۔ نیب کی جانب سے عمران خان کو ذاتی طور پر بیان ریکارڈ کرنے کے لیے نیب ہیڈ کوارٹر پشاور حاضر ہونے کا حکم دیا گیا ہے۔  سترہ مارچ دو ہزار اٹھارہ کو نیب پشاور نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے خلاف سرکاری ہیلی کاپٹر کے غیر قانونی استعمال کے کیس میں پانچ گواہوں کے بیان ریکارڈ کر لیے ہیں، جن میں سول ایوی ایشن کے ایک اور چار ایڈمنسٹریشن افسران شامل ہیں۔ذرائع کا کہنا ہےکہ محکمہ ایڈمنسٹریشن نے ہیلی کاپٹر میں سفر کرنے والوں کی فہرست بھی جمع کرادی ہے، اور ان کی چھان بین بھی شروع کردی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق نیب کو فراہم کی گئی دستاویز میں بتایا گیا ہےکہ ہیلی کاپٹرکی خریداری کی سمری 22 نومبر2007 کو منظور کی گئی تھی اوراس میں باقاعدہ طور پر لکھا گیا تھا کہ سرکاری ہیلی کاپٹر کو گورنر خیبرپختونخوا یا وزیراعلیٰ کے پی ہی استعمال کر سکتے ہیں لیکن اس ہیلی کاپٹر کو عام استعمال میں نہیں لایا جائے گا۔

اس سے قبل پندرہ مارچ کو بھی پشاور میں نیب حکام نے عمران خان کی جانب سے خیبر پختونخوا کے سرکاری ہیلی کاپٹر کے استعمال پر سیکرٹریٹ کیڈر کے تین اہم افسران کے بیانات ریکارڈ کئے تھے اور ان سے اہم معلومات حاصل کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کابٹن دبائیں

ذرائع کے مطابق نیب حکام نے سیکریٹری ایڈمنسٹریشن کے بعد سابق سیکریٹری اسٹبلشمنٹ کو بھی طلب کرلیا ہے۔واضح رہے کہ بیس فروری کو نیب نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کے زیر استعمال سرکاری ہیلی کاپٹر اسکینڈل کی تحقیقات شروع کی تھی۔نیب کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ نیب کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے سرکاری ہیلی کاپٹر ایم آئی 17 پر 22 گھنٹے اور ایکیوریل ہیلی کاپٹر پر 52 گھنٹے پرواز کی اور اوسطاً 28 ہزار روپے کے حساب سے 74 گھنٹوں کے 21 لاکھ 7 ہزار 181 روپے ادا کیے۔

ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کابٹن دبائیں

اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ رپورٹ کے مطابق عمران خان اگر پرائیوٹ کمپنیوں سے ہیلی کاپٹرز حاصل کرتے تو ایم آئی 17 ہیلی کاپٹر کا فی گھنٹہ خرچ 10 سے 12 لاکھ روپے جب کہ ایکیوریل ہیلی کاپٹر کا فی گھنٹہ خرچ 5 سے 6 لاکھ روپے ادا کرنا پڑتا۔یاد رہے کہ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان پر خیبرپختونخواہ کے دو ہیلی کاپٹروں پر 74 گھنٹے غیر قانونی طور پر سفر کرنے کے الزامات ہیں، جس پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے دو فروری کو نوٹس لیا تھا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان پر ایم آئی 171ہیلی کاپٹر پر 22 گھنٹے جبکہ ایکیوریل ہیلی کاپٹر پر 52گھنٹے سفر کے بدلے صرف 21 لاکھ روپے ادا کرنے کا الزام ہے۔

ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کابٹن دبائیے

اس کے علاوہ چیئرمین پی ٹی آئی پر ایم آئی 171 ہیلی کاپٹر پر بنی گالا سے کوہاٹ، پشاور، مردان، بٹگرام، دیر اور کمراٹ جبکہ ایکیوریل ہیلی کاپٹر پر بنی گالا سے پشاور، کوہاٹ، ایبٹ آباد، ہری پور، چترال، سوات اور نوشہرہ تک کا سفر کرنے کے الزامات ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

امریکہ کے ساتھ اعتماد پر مبنی تعلقات کیلئے پرعزم ہیں، عمران خان

عمران خان نے محمود خان کو وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ نامزد کردیا

 

Comments are closed.

Scroll To Top