تازہ ترین
جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کے لئے وزیرخارجہ امریکاروانہ

جنرل اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کے لئے وزیرخارجہ امریکاروانہ

اسلام آباد(22ستمبر،2018)وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی اقوام متحدہ کے اجلاس میں شرکت کرنے کےلیے امریکاروانہ ہوگئے ہیں۔

امریکا روانگی کےلیے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی بغیر کسی پروٹوکول کے کے اسلام آباد ائیر پورٹ پہنچے۔ وزیرخارجہ دورے میں اقوام متحدہ کے اجلاس میں شرکت کریں گے اورجنرل اسمبلی سے خطاب بھی کریں گے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

وزیر خارجہ ہفتے بھرکے دورے کےدوران اہم عالمی رہنماؤں سے ملاقات متوقع ہے۔ سیکریٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ بھی وزیر خارجہ کے ہمراہ ہے۔

شاہ محمود قریشی امریکی انتظامیہ سے مذاکرات کریں گے جبکہ واشنگٹن میں پاکستانی کمیونیٹی سے بھی خطاب کریں گے۔

واضح رہے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کا 73واں اجلاس 25ستمبر سے شروع ہورہاہے جو کہ 9روز جاری رہے گا۔بھارت کی جانب سے اقوام متحدہ کے اجلاس کےموقع پر پاک بھارت وزرائے خارجہ کی ملاقات کی بھارت کی جانب سے منسوخی پر اپنے ردعمل میں شاہ محمود قریشی کاکہناتھا کہ لگتا ہے بھارت میں آنے والے انتخابات کی تیاری ہورہی ہے۔ پاکستان خطے کی بہتری چاہتا ہے لیکن بھارت کی ترجیحات کچھ اور ہی ہیں۔ بھارت کی سیاست تقسیم دکھائی دے رہی ہے۔انھوں نے کہا  کہ بھارت کی جانب سے ملاقات منسوخ کرنے پر حیرانگی اور تعجب ہوا ہے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

انہوں نے کہا کہ بھارت کی جانب سے ایک مرتبہ پھر ہچکچاہٹ کا مظاہرہ کیا گیا ہے۔ کسی بھی مسئلے کا حل بات چیت کے ذریعے ہی نکالا جاسکتا ہے۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ بھارت کے ملاقات سے پہلے ہی قدم ڈگمگا گئے ہیں۔ بلوچستان میں بھارت کی مداخلت کے باوجود آگے بڑھنا چاہتے ہیں۔

اس سے قبل بھارت نے پاک بھارت وزرائے خارجہ کے درمیان نیو یارک میں ہونے والی ملاقات منسوخ کی۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

عمران خان نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو خط لکھ کر مذاکرات کی تجویز پیش کی تھی جس کے جواب میں بھارتی وزیر خارجہ سسشماسوراج نے کہا تھا کہ پاکستان کی اقوام متحدہ میں وزارء خارجہ کی ملاقات کی تجویز کو قبول کرلیا ہے اور اقوام متحدہ کے اجلاس میں سائیڈ لائنز پر ملاقات ہوگی۔

تاہم آج بھارت اپنی زبان سے پھر گیا ہے۔ بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ بھارت نے پاکستان کے وزیر خارجہ کے ساتھ ملاقات منسوخ کردی ہے۔پاک بھارت وزرائے خارجہ ملاقات کا خیرمقدم کرتے ہیں، ترجمان امریکی محکمہ خارجہقبل ازیں ترجمان امریکی محکمہ خارجہ ہیدرنوئرٹ نے پاک بھارت وزرائے خارجہ ملاقات کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہاتھا کہ امید ہے ملاقات میں مضبوط تعلقات کی راہ ہموار ہوگی۔

ہیدرنوئرٹ نے کہا کہ امریکا نیو یارک میں ہونے والی پاک بھارت وزرائے خارجہ کی متوقع ملاقات تعلقات میں بہتری کی جانب قدم ہے، اس اقدام کا خیر مقدم کرتے ہیں، پاک بھارت حکام کا ساتھ بیٹھنا اور معاملات پر بات چیت کرنا ایک مثبت پیغام ہے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

ترجمان امریکی محکمہ خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان اور مودی نے بھی مثبت پیغامات کا تبادلہ کیا ہے، امید ہے ملاقات میں مضبوط تعلقات کی راہ ہموار ہوگی۔

 گذشتہ روز بھارت نے وزیراعظم عمران خان کے خط کا مثبت جواب دیتے ہوئے تصدیق کی تھی کہ جنرل اسمبلی کے اجلاس کے دوران پاک بھارت وزرائے خارجہ کی ملاقات ہوگی۔ بھارتی وزیر خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور ان کے درمیان آئندہ ہفتے اقوام متحدہ کے اجلاس میں سائیڈ لائنز پر ملاقا ت ہو گی۔
اس سے قبل گذشتہ روز ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر فیصل سوشل میڈیا پرپیغام میں کہا تھا کہ وزیراعظم نے بھارتی ہم منصب کومثبت اندازمیں جوابی خط لکھا، بھارتی وزیراعظم کے خیرسگالی جذبات کا اسی انداز میں جواب دیاگیا ہے۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ آئیں بیٹھ کر تمام مسائل کا حل مذاکرات کے ذریعے نکالتے ہیں، عمران خان بھارت کی طرف سے خط کے باضابطہ جواب کا انتظار کر رہے ہیں۔واضح رہے کہ  وزیراعظم عمران خان نے بھارتی ہم منصب نریندر مودی کو خط لکھا تھا جس میں مذاکرات کا سلسلہ بحال کرنے پر زور دیا گیا تھا۔بھارتی اخبار کے مطابق عمران خان نے اپنے بھارتی ہم منصب کو لکھے گئے خط میں دسمبر دوہزار پندرہ کے بعد تعطل کا شکار ہونے والے مذاکرات دوبارہ شروع کرنے کی دعوت دی ہے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

بھارتی اخبار کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے اپنے خط میں پاکستان اور بھارت کو کشمیر اور دہشتگردی سمیت تمام مسائل بات چیت کے زریعے حل کرنے پر زور دیا ہے۔ بھارتی اخبار نے مزید بتایا کہ عمران خان رواں ماہ نیویارک میں اقوام متحدہ کے اجلاس کے دوران پاکستانی و بھارتی وزرائے خارجہ کے درمیان ملاقات کے بھی خواہشمند ہیں۔بھارتی اخبار کے مطابق عمران خان نے خط بھارتی وزیراعظم کی جانب سے بامعنی مذاکرات پر زور کے بعد بھیجا، نریندر مودی نے بامعنی مذاکرات کی بات عمران خان کی انتخابات میں کامیابی کے بعد کی جانے والی تقریر کے جواب میں کہی تھی۔

یاد رہے کہ وزیراعظم نے پچیس جولائی کو ہونے والے عام انتخابات میں کامیابی کے بعد اپنی تقریر میں کہا تھا کہ تعلقات معمول پر لانے کےلئے اگر بھارت ایک قدم آگے بڑھے گا تو پاکستان دو قدم بڑھائے گا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

 اکتیس جولائی کوبھارت کے وزیراعظم نے پاکستان تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان کو فون پر ملک میں حالیہ عام انتخابات میں کامیابی پر مبارک باد دی تھی، نریندر مودی کا کہنا تھا کہ دونوں ملکوں کو دوطرفہ تعلقات کو آگے بڑھانے کے لیے ایک مشترکہ حکمت عملی اختیار کرنی چاہیے۔

انھوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کی حکومتوں کو اپنے عوام کو غُربت کے گھن چکر سے نکالنے کے لیے ایک مشترکہ لائحہ عمل وضع کرنا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیے

بھارت نے پاک بھارت وزرائے خارجہ کی ملاقات منسوخ کردی

پاک بھارت وزرائے خارجہ ملاقات کا خیرمقدم کرتے ہیں، ترجمان امریکی محکمہ خارجہ

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top