تازہ ترین
افغان سفیر کاایس پی طاہر داوڑ کےاغواء،قتل کے واقعے پراظہار افسوس

افغان سفیر کاایس پی طاہر داوڑ کےاغواء،قتل کے واقعے پراظہار افسوس

اسلام آباد (15نومبر، 2018) افغان سفیر عمر زخیلوال نےایس پی طاہر داوڑ کےاغواء اور افغانستان میں قتل کے واقعے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

افغان سفیر ڈاکٹر عمر زخیلوال نےکہا کہ نعش کو بہت جلد مکمل احترام کے ساتھ پاکستان کے حوالے کردیا جائے گا۔عمرزخیلوال نے بتایاطاہر داوڑ کی نعش اس وقت جلال آباد میں موجود ہے۔

ویڈیودیکھنے کےلیے پلے کابٹن دبائیں:

افغان سفیر کاکہناتھا کہ ہماری حکومت طاہر داوڑ کے ہلاک ہونے کی مکمل تحقیقات کرے گی۔

اس سے قبل آج ترجمان دفتر خارجہ نے بتایاتھاکہ افغان وزارت خارجہ نے ایس پی طاہر داوڑ کی لاش اور شناحتی کارڈ ملنے تصدیق کردی ہے۔ اس بارے میں  افغان وزارت خارجہ نے کابل میں پاکستانی سفارتخانے کو آگاہ کیاتھا۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ افغان وزارت خارجہ نے ایس پی طاہر خان داوڑ کی لاش ملنے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ لاش ننگر ہار صوبے دربابا ضلع سے ملی ہے۔ طاہر خان کا سروس کارڈ بھی لاش کے پاس سے ملا تھا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق میت کو جلال آباد منتقل کیا جارہا ہے اور میت کو  طور خم بارڈر کے ذریعے پاکستانی حکام کے حوالے کیا جائے گا۔دوسری جانب پشاور میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان میں سبکدوش ہونے والے افغان سفیر ڈاکٹر عمر ذاخیلوال نے کہا ہے کہ افغانستان میں شہید کیے جانے والے ایس پی طاہر خان داوڑ کے اغوا اور قتل کی تحقیقات ہونی چاہیے۔ ایس پی کا قتل دونوں ممالک کیلئے سوالیہ نشان ہے۔افغان سفیر نے مزید کہا کہ ایس پی طاہر داوڑ کے حوالے سے پاکستانی حکومت نے ابھی تک رابطہ نہیں کیا۔

یہ بھی پڑھیے

اسلام آباد سے لاپتہ ایس پی طاہر خان کی سوشل میڈیا پر مبینہ  قتل کی اطلاع

ایس پی طاہر خان کے اغوا کا مقدمہ بھائی کی مدعیت میں درج

 

یہ بھی پڑھیے:

دفتر خارجہ نے ایس پی طاہر داوڑ کی لاش اور شناحتی کارڈ ملنے تصدیق کردی

Comments are closed.

Scroll To Top