تازہ ترین
آرمی چیف سے ترک وزیرخارجہ کی ملاقات

آرمی چیف سے ترک وزیرخارجہ کی ملاقات

راولپنڈی :(14ستمبر 2018)آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ترک وزیر خارجہ سے ملاقات کی ہے، ملاقات میں ترک وزیرخارجہ نے خطےمیں امن کے لئے کوششوں اور مل کر کام کرنے پر پاکستان کو سراہا۔

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے تعلقات عامہ کے شعبے آئی ایس پی آر کی جانب سے جاری بیان کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ترک وزیر خارجہ میولوت چاؤش اوغلو کی پاک فوج کے ہیڈکوارٹر جی ایچ کیو میں ملاقات کی ،جس میں پاک ترک تعلقات اور خطے کی سیکیورٹی کی صورتحال بالخصوص مشرق وسطیٰ کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

آئی ایس پی آر کے مطابق ترک وزیر خارجہ نے خطے میں امن کیلئے پاکستان کی کوششوں کو سراہا اور دونوں ممالک میں سکیورٹی تعاون کے فروغ پر بھی بات چیت ہوئی۔

اس سے قبل دفتر خارجہ میں وفود کی سطح پر ہونے والے مذاکرات کے بعد پاکستان اور ترکی کے وزرائے خارجہ مشترکہ پریس کانفرنس کی، اس موقع پر ترک وزیر خارجہ میولوت چاوش اوغلو نے پاکستان میں نئی حکومت کے قیام پر وزیراعظم عمران خان کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ حکومتیں بدلتیں رہتی ہیں، نئے لوگ آتے رہتے ہیں لیکن اصل دوستی عوام کے ساتھ ہے، اس دوستی کو قائم رکھنے کےلئے ہم کوششیں کرتے رہیں گے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

ترک وزیر خارجہ نے کہا کہ آج کے مذاکرات میں شاہ محمود قریشی سے بے شمار موضوعات پر بات چیت ہوئی اور زیر بحث لائی گئی یہ باتیں کامیابی کا سبب بنیں گی۔

مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا ترکی ہر دکھ درد میں پاکستان کا دوست رہا ہے، پاک ترک عوام کے دل ایک دوسرے سے جڑے ہیں، پاکستان اور ترکی کے تعلقات حکومتوں تک محدود نہیں ہیں۔انہوں نے کہا ہماری محبت کے پیچھے ثقافت، مذہب، عوام کی محبت ہے، دونوں ممالک نے دفاعی تعاون، باہمی تعلقات بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا، مذاکرات میں مختلف معاملات پر تفصیلی بات چیت ہوئی ہے۔

شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ ترکی نے ہمیشہ مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا، ایف اے ٹی ایف کے معاملے پر ترکی نے ہمارا ساتھ دیا، نوجوان سفارتکاروں کے تربیتی پروگرام پر بھی بات چیت ہوئی۔ انہوں نے کہا گستاخانہ خاکوں کے معاملے پر بھی ترکی نے ہمارا ساتھ دیا۔وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان مسئلہ کشمیر کا بہترین حل چاہتے ہیں، کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی ہورہی ہے، اقوام متحدہ بھی مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں پربول پڑا ہے،مختلف فورمز پر ساتھ دینے کے لیے ترکی کے شکرگزار ہیں۔

اس سے قبل ترجمان دفتر خارجہ کے جانب سے جاری ٹویٹ میں کہا گیا تھا کہ ترکی کے وزیر خارجہ میولوت چاؤش اوغلو دفتر خارجہ پہنچے،اس موقع پر وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ترک ہم منصب کا استقبال کیا۔

پاکستان کی جانب سے وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی جبکہ ترکی کی جانب سے ترک وزیر خارجہ اپنے اپنے وفد کی قیادت کی، مذکرات میں دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات، تجارتی اور اقتصادی تعاون پر بات چیت کی گئی۔

واضح رہے کہ ترک وزیر خارجہ میولوت چاوش اوغلو اعلیٰ سطح وفد کے ہمراہ چار روزہ دورے پر آج اسلام آباد پہنچے،اسلام آباد پہنچنے پر وزارت خارجہ کے سینئر افسران اور پاکستان میں ترکی کے سفیر نے ان کا استقبال کیا۔

ترکی کے وزیرخارجہ اپنے دورے کے دوران صدر رجب طیب اردگان کا اہم پیغام وزیراعظم عمران خان کو پہنچائیں گے اور پاکستان کے نئے صدرمملکت عارف علوی کو ترک صدر اور اپنی جانب سے مبارکباد بھی پیش کریں گے۔مولود چاوش اوغلو پاکستان کے ساتھ تعلقات نئی حکومت کے دور میں بھی اسی جوش وجذبے سے جاری رکھنے اور ان تعلقات کو مزید فروغ دینے کا ترک صدر کا پیغام پاکستانی حکام تک پہنچائیں گے۔

ترکی کے وزیرخارجہ اپنے پاکستانی ہم منصب شاہ محمود قریشی کے ساتھ وفود کی سطح پر وزارت خارجہ میں مذاکرات بھی کریں گے،وزیرخارجہ مولود چاوش اوغلونئی حکومت کے اقتدار سنبھالنے کے بعد چوتھے وزیرخارجہ ہیں جو پاکستان کے دورے پر اسلام آباد پہنچ رہے ہیں۔یاد رہے کہ سات ستمبر کو چینی وزیرخارجہ وانگ ژی تین روزہ دورے پر پاکستان پہنچے تھے، آٹھ ستمبر کو چینی وزیر خارجہ وانگ ژی تین نے دفتر خارجہ کا دورہ کیا، جہاں وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے ان کا استقبال کیا۔

پاکستان اور چین کے درمیان وفود کی سطح پر ہونے والے مذاکرات کے بعد چینی وزیر خارجہ نے اپنے پاکستان ہم منصب کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کی، جس میں چینی وزیرخارجہ نے وزیراعظم عمران خان کو دورہ چین کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ چین وزیراعظم عمران خان کوبطورگیسٹ آف آنرچین میں ہونیوالی انٹرنیشنل ایکسپو میں بلانے کا خواہشمند ہے۔

یہ ویڈیو دیکھنے کیلئے پلے کا بٹن دبائیے

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے چینی ہم منصب کا کہنا تھا کہ پاکستان کے دورے کا مقصد نئی حکومت کیساتھ رابطے بڑھانا ہے، چین اپنی خارجہ پالیسی میں پاکستان کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔

وانگ ژی کا کہنا تھا کہ شاہ محمود قریشی کے ساتھ ملاقات بہت مثبت رہی، ہم پاکستان کیساتھ تذویراتی تعلقات مزید مضبوط بنانا چاہتے ہیں جس کے لئے پاکستان کے ساتھ ہر شعبے میں تعاون جاری رکھیں گے ۔

مشترکہ پریس کانفرنس میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ چین کے وزیر خارجہ کا دفتر خارجہ آمد پر خیر مقدم کرتے ہیں، وانگ ژی پاکستان کے دیرینہ دوست ہیں، ہمیشہ پاکستان کی حمایت کی، پاک چین دوستی کو عوامی اور حکومتی سطح پر بھرپور پذیرائی حاصل ہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ چینی وزیر خارجہ نے نومبر میں وزیراعظم کو دورہ چین کی دعوت دی ہے، ہم نے بھی چینی صدر اور وزیراعظم کو دورہ پاکستان کی دعوت دی جبکہ چینی وزیرخارجہ،صدر،وزیراعظم اورآرمی چیف سے ملاقات بھی کریں گے۔انہوں نے کہا کہ پاک چین دوستی کو عالمی سطح پر بھی پذیرائی حاصل ہے اورپاکستان چین سے ملکر عالمی فورمز پر کام کرتا رہے گا۔

شاہ محمود قریشی کا مزیدکہنا تھا کہ پاک چین دوستی لازوال ہے ،چینی قیادت کی جانب سے الیکشن میں کامیابی کی مبارکباد دینے پر شکریہ ادا کرتے ہیں،چین نے عالمی برادری پر زور دیا کہ پاکستان کی قربانیوں کو سراہے اور چین نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے ۔

یہ بھی پڑھیے

فواد چوہدری سے سعودی ہم منصب کی ملاقات، باہمی دلچسپی کے امور پر گفتگو

وزیر اطلاعات فواد چوہدری سے سعودی سفیر نواف بن سید المالکی کی ملاقات

 

Spread the love

Comments are closed.

Scroll To Top